islam_allaha_allaha

اللہ تعالیٰ سب کچھ سننے والا ، دیکھنے والا ہے

EjazNews

(سورة لقمان۱۳) ۸۲ ۔ تم سب کی پیدائش اور مرنے کے بعد جلانا ایسا ہی ہے جیسے ایک جی کا ، بیشک اللہ تعالیٰ سننے والا دیکھنے والا ہے۔

(سورة المومن ۰۴) ۶۵۔ جو لوگ باوجودا پنے پاس کسی سند کے نہ ہونے کے آیات الٰہی میں جھگڑا کرتے ہیں ان کے دلوں میں بجز نری بڑائی کے اور کچھ نہیں وہ اس تک پہنچنے والے ہی نہیں، سو آپ اللہ تعالیٰ کی پناہ طلب کیجئے، بیشک وہی سب کچھ سننے والا ہے اور سب سے زیادہ دیکھنے والا ہے۔

(سورة محمد ۷۴) ۹۱۔ سو (اے نبی!) آپ یقین کرلیں کہ اللہ تعالیٰ کے سوا کوئی معبود نہیں اور اپنے گناہوں کی بخشش مانگا کریں اور مومن مردوں اور مومن عورتوں کے حق میں بھی، اللہ تعالیٰ لوگوں کی آمدو رفت کی اور رہنے سہنے کی جگہ کو خوب جانتا ہے۔

(سورة الحدید ۷۵) ۴۔ وہی ہے جس نے آسمانوں اور زمین کو چھ دن میں پیدا کیا پھر عرش پر مستوی ہو گیا۔ وہ (خوب)جانتا ہے اس چیز کو جو زمین میں جائے اور جو اس سے نکلے اور جو آسمان سے نیچے آئے اور جو کچھ چڑھ کر اس میں جائے اور جہاں کہیں تم ہو وہ تمہارے ساتھ ہے اور جو تم کر رہے ہو اللہ تعالیٰ دیکھ رہا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  اللہ کی راہ سے روکنا

(سورة المجادلة ۸۵) ۱۔ یقینا اللہ تعالیٰ نے اس عورت کی بات سنی جو تجھ سے اپنے شوہر کے بارے میں تکرار کر رہی تھی اور اللہ تعالیٰ کے آگے شکایت کر رہی تھی ، اللہ تعالیٰ تم دونوں کے سوال و جواب سن رہا تھا، بیشک اللہ تعالیٰ سننے دیکھنے والا ہے۔

اللہ تعالیٰ ستار العیوب ہے

سورة محمد ۷۴) ۹۲

۔کیا ان لوگوں نے جن کے دلوں میں بیماری ہے یہ سمجھ رکھا ہے کہ اللہ تعالیٰ ان کے کینوں کو ظاہر ہی نہ کرے گا۔ ۰۳۔ اور اگر ہم چاہتے تو ان سب کو تجھے دکھا دیتے پس تو انہیں ان کے چہرے سے ہی پہچان لیتا ، اور یقینا تو انہیں ان کی بات کے ڈھب سے پہچان لے گا، تمہارے سب کام اللہ تعالیٰ کو معلوم ہیں۔ [یعنی ایک ایک شخص کی اس طرح نشاندہی کر دیتے کہ ہر منافق کو عبانا پہچان لیا جاتا ۔ لیکن تمام منافقین کے لیے اللہ نے ایسا اس لیے نہیں کیا کہ یہ اللہ کی صفت ستاری کے خلاف ہے، وہ بالعموم پر دہ پوشی فرماتا ہے، پردہ دری نہیں۔ دوسرا اس نے انسانوں کو ظاہر پر فیصلہ کرنے کا اور باطن کا معاملہ اللہ کے سپرد کرنے کا حکم دیا ہے ]۔(تفسیر از شاہ فہد قرآن)]

یہ بھی پڑھیں:  اللہ تعالیٰ قریب ہے ، قرب اللہ