turkey back

بحیرہ روم میں گیس کی تلاش میں گئے ترک جہاز کی واپسی، یونان کا خیر مقدم

EjazNews

یونان نے ترک سروے جہاز کی بحیرہ روم کے متنازعہ پانیوں سے واپسی کا خیر مقدم کیا ہے۔
گذشتہ ماہ ترکی نے جزیروں کستیلوریزو اور کریٹ کے درمیان تیل اور گیس کے ذخائر تلاش کرنے کے لیے ایک سروے جہاز بھیجا تھا۔ جس کے بعد یونان اور ترکی کے درمیاں کشیدگی میں اضافہ ہوگیا تھا۔ اور دونوں ممالک نے مشرقی بحیرہ روم میں فوجی مشقیں بھی کی تھی۔
غیر ملکی میڈیاکے مطابق حالیہ تنازعے کی شروعات کے بعد پہلی مرتبہ ترکی کا سروے جہاز متنازعہ پانیوں سے واپس قریبی انتالیہ کے بندرگاہ گیا۔
تیل اور گیس کے ممکنہ ذخائر پر تنازعے نے مشرقی بحیرہ روم میں جنگی کشیدگی کا سبب بن گیا ہے۔ نیٹو نے ممبر ترکی اور یونان دونوں نے اس علاقے میں اپنے جنگی جہاز بھیجے۔نیٹو نے کشیدگی کم کرنے کے لیے مداخلت کی اور دونوں ممالک کی افواج کے درمیان بات چیت کرائی۔
یونان کے مطابق ترکی متنازعہ پانیوں میں گیس و تیل کی تلاش کر رہا ہے جبکہ ترکی کا کہنا ہے کہ یہ کوئی متنازعہ جگہ نہیں ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  عراقی دانشوروں کاقتل