shafqat mahmood

15ستمبر سے مرحلہ وار سکول کھلیں گے:وفاقی وزیرشفقت محمود

EjazNews

وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا ہے کہ بین الصوبائی وزرائے تعلیم کے اجلاس اور نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کے فیصلوں کے آگاہ کیا جبکہ طلبہ و تعلیمی اداروں کے لیے کچھ تجاویز اور ہدایات بھی بیان کیں۔

انہوں نے کہا کہ تعلیمی اداروں کو کھولنے کے مرحلہ وار طریقے پر کافی بحث ہوئی ہے اور ہم نے تمام عوامل اور دنیا کے ردعمل کو دیکھتے ہوئے جب ہم نے جائزہ لیا تو ہم نے یہ فیصلہ کیا کہ پہلے ہائر ایجوکیشن اور ہائر سیکنڈری سکولز، پھر چٹھی سے آٹھویں اور پھر پرائمری سکول کھولے جائیں۔ اس وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے کلاس رومز یا کسی تنگ جگہ پر بچوں کی تعداد کو کم کرنے کی ضرورت ہے تاکہ بیماری کا ایک سے دوسرے میں پھیلاؤ روکا جاسکے، اس کے علاوہ یہ کوشش ہے کہ بچوں کے درمیان فاصلہ برقرار ہو۔ یہ اسی صورت میں ممکن ہے کہ آپ نے پہلے ہی بچوں کے درمیان فاصلہ رکھ دیا ہے یعنی ایک کلاس کو 2 یا 3 حصوں میں تقسیم کردیا ہو اور ایک دن ایک بیچ اور دوسرے دن دوسرا بیچ آئے۔ اس تمام صورتحال میں کلیدی کردار ماسک کا استعمال ہے، ضروری نہیں کہ سرجیکل ماسک استعمال ہو، والدین کپڑے سے بھی ماسک بنا سکتے ہیں اور اسے دھوکر روزانہ استعمال کیا جاسکتا ہے۔ ماسک کا استعمال لازمی طور پر کیا جائے، بچوں کو اس کی اہمیت بتائی جائے اور اسکولز اور کالجز انتظامیہ سے تعاون کیا جائے کیونکہ ان کے لیے ہدایت ہے کہ اس کا اطلاق کرنا ہے۔اگر آپ بیمار ہیں تو کسی صورت بھی اسکولز، کالجز یا جامعات نہیں جائیں لیکن تعلیمی اداروں کو ہدایت کی گئی ہے کہ اس طرح کی علامات کی اسکرین اور جہاں ممکن ہو درجہ حرارت چیک کیا جائے تاکہ بیمار بچے اور افراد اداروں میں نہ آئیں، اس کے علاوہ ہاتھوں کا صاف رکھنا بھی اہم جزو ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  سانحہ مشرقی پاکستان کے بعد کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرنا دوسرا بڑا واقعہ ہے:آصف علی زرداری

سکولوں کے لئے ہدایات:

بچوں کے درمیان سماجی فاصلہ برقرار رکھیں۔ یقین کریں بچے اپنے ہاتھ باقاعدگی سے دھوتے رہیں ہینڈ سینیٹائزر کا استعما لکریں۔ فیس ماسک کا استعمال لازم قرار دیں۔

ڈرائیور حضرات جو بچوں کو سکول یا کالج لے کر ج اتے ہیں وہ اپنی گاڑیوں میں سماجی فاصلہ یقینی بنائیں۔ گاڑی میں بٹھاتے وقت یقین کریں بچوں نے فیس ماسک پہنے ہوں۔

والدین کے لئے ہدایات:

بچوں کو ماسک پہنا کر سکول روانہ کریں ۔ چاہے وہ کپڑے کا ماسک ہی کیوں نہ ہو۔ بچوں میں کھانسی یا بیماری کی علامات ظاہر ہونے کی صورت میں سکول ہرگز نہ بھیجیں

اگر طبیعت زیادہ خراب ہو تو بچوں کافوری ٹیسٹ کروایا جائے

پازیٹیو آنے کی صورت میں سکول کو مطلع کیا جائے