head coach

جب چیزیں ہمارے حق میں ہوتی ہیں تو اچانک بارش آ جاتی تھی:مصباح الحق

EjazNews

پاکستان کرکٹ ٹیم کے ہیڈ کوچ، چیف سیلیکٹر اور سابق کپتان مصباح الحق نے لاہور میں پریس کانفرنس کی جس میں ان کا کہناتھا
کرکٹ کی بحالی کے لیے انگلینڈ کا دورہ ضروری تھا، کئی ماہ سے کرکٹ بند تھی۔ اس سے کئی مثبت چیزیں سامنے آئیں۔ورلڈ کپ تک کھلاڑیوںکا بہترین کمبینیشن بنانا چاہتے ہیں۔جب ٹیم کی اچھی کارکردگی ہو گی تو اچھے نتائج بھی برآمد ہوں گے۔

ان کا کہنا تھا کھلاڑی مستقبل میں اچھا کھیلنے کے لیے پرعزم ہیں۔ ہر کام میں بہتری کی گنجائش ہوتی ہے اس لیے ٹیم کو لمبے عرصے کے لیے تیار کرنا ہے۔لانگ ٹرم پالیسی کے تحت آگے بڑھ رہے ہیں، نوجوان کھلاڑیوں کو تسلسل کے ساتھ موقع ملے گا۔

پریس کانفرنس میں جب بابر اعظم کی کارکردگی پر سوال اٹھایا گیا تو ان کا کہنا تھا ان کی کارکردگی بہتر ہے۔وہ مکمل کپتان ہیں، ان کو ٹیم کے حوالے سے فیصلے کرنے کی مکمل آزادی دی گئی ہے۔بہتری کی گنجائش ہمیشہ رہتی ہے اس لیے کوشش جاری ہے کہ زیادہ لمبے عرصے تک کے لیے ٹیم تیار کریں۔

یہ بھی پڑھیں:  پاکستانی کرکٹرز کے بارے میں شک و شبہ نہیں: رچرڈسن

انہوںکا کہنا تھا محمد حفیظ، شعیب ملک اور وہاب ورلڈ کپ پلان کا حصہ ہیں۔جبکہ سرفراز ٹیم کا حصہ ہیں اور مستقبل میں بھی رہیں گے۔
محمدعامرکی پرفارمنس کے بارے میں پوچھے گئے سوال پران کا کہنا تھا کہ وہ ٹی ٹونٹی کے اچھے بائولرہیںاس لیےانہیںموقع دیا گیا۔
ان کا کہنا تھا یہ سوچ بالکل غلط ہے کہ کھلاڑی مجھ سے ڈرتے ہوں گے۔ دورہ انگلینڈ پر تمام کھلاڑیوں نے ہی مجھ سے تاثرات شیئر کیے جب چیزیں ہمارے حق میں ہوتی ہیں تو اچانک بارش آ جاتی تھی۔