women_makeup

پنکھڑی اک گلاب کی سی ہے

EjazNews

ہونٹوں کو شاعر کبھی گلاب کی پنکھڑیوں سے تشبیہ دیتے ہیں تو کبھی جام سے اور کبھی ہونٹوں کے خم کو قاتل خم کہا جاتا ۔ دراصل ہونٹ جسم کا وہ حصہ ہیں جہاں چکنائی پیدا کرنے والے غدود نہ ہونے کی بنا ء پر جلد بہت خشک ہو کر پھٹنے لگتی ہے۔ پھر ہونٹ کاٹنے اور ہونٹوں پر بار بار زبان پھیرنے کی عادت بھی ہونٹوں کی قدرتی چکنائی ختم کرنے کا باعث بنتی ہے ۔اس کے علاوہ تیز دھوپ سے جلدکے ساتھ ہونٹ بھی متاثر ہوتے ہیں۔وٹامن بی، آئرن اور غذا میں فیٹی ایسڈز کی کمی کی وجہ سے بھی ہونٹ خشک ہو کر پھٹنے لگتے ہیں۔ خشک موسم والے علاقوں میں رہنے والوں کے ہونٹ بھی نمی کی کمی کا شکار ہوکر پھٹنے لگتے ہیں۔ مردوں میں تمباکو نوشی کے باعث ہونٹوں کا قدرتی تیل ختم ہونے سے ہونٹ پھٹتے ہیں۔

ہونٹوں کی مناسب دیکھ بھال بے حد ضروری ہے پھٹے ہوئے ہونٹ شخصیت کا پورا تاثر خراب کر دیتے ہیں۔ ہونٹوں کو خشکی سےبچانے کے لئے خاص توجہ درکار ہوتی ہے۔ غذا میں وٹامن اے اور بی وافر مقدار میں شامل ہونے چاہئیں۔ پانی کا استعمال زیادہ سے ز یادہ کرنا چاہئے۔ لپ بام اور موئسچرائزر ایسے استعمال کرنے چاہئیں جو ایلو ویرا اور وٹامن سے بھرپور ہوں۔ سن بلاک والے لپ بام کا استعمال بھی اچھے نتائج دیتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  چھوٹے چھوٹے نسخوں سے آپ اپنی خوبصورتی میں بے پناہ اضافہ کر سکتی ہیں

ہونٹوں کو نرم گلابی بنانے کے لئے چند تجاویز:
ہونٹوں کے کنارے اگر کالے پڑ جائیں تو چار حصے ناریل کا تیل اور ایک حصہ لیموں ملا کر باقاعدگی سے ہونٹوں پر لگائیں اس سے ہونٹ نرم گلابی ہو جاتے ہیں۔

شہد میں چینی ملا کر ہونٹوں پر ملیں اور پانچ منٹ بعد دھو لیں۔ ہونٹوں کی کھوئی ہوئی شادابی لوٹ سکتی ہے۔
ایک چمچ بالائی میں دوقطرے گلیسرین ملا کر ہونٹوں پر لگانے سے ہونٹ تروتازہ اور چمکدار ہوجاتے ہیں۔ ایک چمچ زیتون کے تیل میں چند قطرے لیموں کا رس ملا کر ہونٹوں پر لگانے سے بھی ہونٹوں کی خشکی دور ہو تی ہے۔
کیلے کے گودے میں شہد ملا کر ہونٹوں پر لگانے سے بھی ہونٹو ں کی خشکی زائل ہو جاتی ہے۔

پکے ہوئے پپیتے کا گودا ہونٹوں پر ملنے سے ہونٹوں کے مردہ خلیات ختم ہو تے ہیں اوران میں قدرتی نمی اور چمک آجاتی ہے۔
ہمیشہ اچھی اور عمدہ معیار کی لپ اسٹک استعمال کریں، لپ اسٹک ہونٹوں کے خم اور بناوٹ کو اجاگر کرکے انہیں مزید پر کشش بناتی ہے۔
لپ اسٹک لگانےسے پہلے ہونٹوں پر تھوڑا سا پائوڈر یا فائونڈیشن لگا لیں پھر لپ پینسل سے آئوٹ لائن بنا کر لپ اسٹک لگائیں اسے ٹشو سے صاف کر یں اور ایک کوٹ اور لگائیں اس سے لپ اسٹک دیر تک برقرار رہے گی۔

یہ بھی پڑھیں:  میک اپ کے ذریعے اپنی جلد میں نکھار کیسے پیدا کریں؟

لپ اسٹک کے شیڈ کا ہمیشہ جلد کے مطابق انتخاب کریں۔ مثلاً جن خواتین کا رنگ پھیکا ہے وہ گلابی یا Paleرنگوں کی لپ اسٹک لگانےسے دلکش نہیں لگ سکتیں کھلی ہوئی رنگت پر آتشی گلابی شیڈ انتہائی دلکش معلوم ہوتا ہے۔

غلط شیڈ کا استعمال بعض اوقات مسائل پیدا کر دیتا ہے اس کا درست حل یہ ہے کہ جب آپ لپ اسٹک خریدیں تو ہونٹوں پر لگا کر آئینے میں چیک کریں کہ منتخب شیڈ آپ کی جلد سے مطابقت رکھتا ہے کہ نہیں۔ دن کے لئے ہمیشہ نیچرل شیڈز کا استعما ل کریں۔
میک اپ کرتے ہوئے اگر آنکھیں بھاری میک اپ سے سجی ہوں تو ہونٹ سوفٹ لگنے چاہئیں۔ بصورت دیگر گہرے شیڈ سے سجے ہونٹوں کے ساتھ آنکھوں کا میک اپ ہلکا ہونا چاہئے۔