Quran_islam_Ayat

اللہ تعالیٰ اور رسول ﷺ کی مخالفت

EjazNews

(سوۃ الانفال۸)
اس وقت کو یاد کرو جب کہ آپ کا رب فرشتوں کو حکم دیتا تھا کہ میں تمہارا ساتھی ہوں سو تم ایمان والو کی ہمت بڑھائو میں ابھی کفار کے قلوب میں رعب ڈالے دیتا ہوں سو تم گر دنوں پر مارو اور ان کے پور پور کو مارو۔ [یہ اللہ تعالیٰ نے فرشتوں کے ذریعے سے اور خاص اپنی طرف سے جس جس طریقے سے مسلمانوں کی بدر میں مدد فرمائی اس کا بیان ہے۔(تفسیر از شا ہ فہد قرآن)]
۱۳۔ یہ اس بات کی سزا ہے کہ انہوں نے اللہ کی اور اس کے رسول کی مخالفت کی اور جو اللہ کی اور اس کے رسول کی مخالفت کرتا ہے سو بیشک اللہ تعالیٰ سخت سزا دینے والا ہے۔
(سورۃ المجادلۃ۵۸)
۵۔ بیشک جو لوگ اللہ اور اس کے رسول کی مخالفت کرتے ہیں وہ ذلیل کیے جائیں گے جیسے ان سے پہلے کے لوگ ذلیل کیے گئے تھےاور بیشک ہم واضح آیتیں اتار چکے ہیں اور کافروں کے لیے تو ذلت والا عذاب ہے۔
۶۔ جس دن اللہ تعالیٰ ان سب کو اٹھائے گا پھر انہیں ان کے کیے ہوئے عمل سے آگاہ فرمائے گا جسے اللہ تعالیٰ نے شمار رکھا ہے اور جسے یہ بھول گئے اور اللہ تعالیٰ ہر چیز سے واقف ہے۔
۲۰۔ بیشک اللہ تعالیٰ کی اور اس کے رسول کی جو لوگ مخالفت کرتے ہیں وہی سب سے زیادہ ذلیلوں میں ہیں۔
۲۲ ۔ اللہ تعالیٰ پر اور قیامت کے دن پر ایمان رکھنے والوں کو آپ اللہ اور اس کے رسول کی مخالفت کرنے والوں سے محبت رکھتے ہوئے ہرگز نہ پائیں گے گو وہ ان کے باپ یا ان کے بیٹے یا ان کے بھائی یا ان کے کنبہ (قبیلے) کے (عزیز) ہی کیوں نہ ہوں ۔ یہی لوگ ہیں جن کے دلوں میں اللہ تعالیٰ نے ایمان کو لکھ دیا ہے اور جن کی تائید اپنی روح سے کی ہے اور جنہیں ان جنتوں میں داخل کرے گا جن کے نیچے نہریں بہہ رہی ہیں جہاں یہ ہمیشہ رہیں گے، اللہ تعالیٰ ان سے راضی ہے اور یہ اللہ سے خوش ہیں یہ خدائی لشکر ہے آگاہ رہو بیشک اللہ تعالیٰ کے گروہ والے ہی کامیاب لوگ ہیں۔
(سورۃ الحشر ۵۹)
۴۔ یہ اس لیے کہ انہوں نے اللہ تعالیٰ کی اور اس کے رسول کی مخالفت کی اور جو بھی اللہ تعالیٰ کی مخالفت کرے گا تو اللہ تعالیٰ بھی سخت عذاب کرنے والا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  اچھا لباس اور زیب و زینت