islam_quran

اللہ اور رسولﷺ کی جماعت، حزب اللہ و الرسولﷺ

EjazNews

(سورۃ البقرۃ۲)
۲۵۶۔ دین کے بارے میں کوئی زبردستی نہیں، ہدایت ضلالت سے روشن ہو چکی ہے، اس لئے جو شخص اللہ تعالیٰ کے سوا دوسرے معبودوں کا انکار کر کے اللہ تعالیٰ پر ایمان لائے اس نے مضبوط کڑے کو تھام لیا، جو کبھی نہ ٹوٹے گا اور اللہ تعالیٰ سننے والا ہے۔
(سورۃ آل عمران۳)
۱۰۱۔ (گویہ ظاہر ہے کہ) تم کیسے کفر کر سکتے ہو؟ باوجودیکہ تم پر اللہ تعالیٰ کی آیتیں پڑھی جاتی ہیں اور تم میں رسول اللہ موجود ہیں۔ جو شخص اللہ تعالیٰ (کے دین )کو مضبوط تھام لے تو بلاشبہ اسے راہ راست دکھا دی گئی۔
(سورۃ النسا۴)
۱۷۴۔ اے لوگو! تمہارے پاس تمہارے رب کی طرف سے سد اور دلیل آ پہنچی اور ہم نے تمہاری جانب واضح اور صاف نور اتار دیا۔
۱۷۵۔ پس جو لوگ اللہ تعالیٰ پر ایمان لائے اور اسے مضبوط پکڑ لیا انہی کو وہ عنقریب اپنی رحمت اور فضل میں لے لے گااور انہیں اپنی طرف کی راہ راست دکھا دے گا۔
(سورۃ المائدہ۵)
۵۵۔ تمہارے ساتھی توصرف اللہ تعالیٰ اس کا رسول اور ایمان والے ہیں وہ جو نماز قائم کرتے ہیں زکوٰۃ ادا کرتے ہیں اور سر جھکائے رکھتے ہیں۔
۵۶۔ اور جو اللہ تعالیٰ اور اس کے رسولﷺ اور ایمان والوں کو ساتھی بنائیں گے تو اللہ تعالیٰ کا وہ گروہ ہی غالب آنے والا ہے۔
(سورۃ الاعراف۷)
۱۵۷۔ جو لوگ بے پڑھے نبی رسول ﷺ کی پیروی کرتے ہیں جسے وہ اپنے پاس تورات اور انجیل میں لکھا ہوا پاتے ہیں جو انہیں پسندیدہ باتوں کی تلقین کرتاہے، ناپسندیدہ باتوں سے منع کرتا ہے، پاکیزہ چیزوں کو ان کے لئے حلال کرتا ہے، گندی چیزوں کو ان پر حرام کرتا ہے اور ان کے بوجھ اور طوق جوان پر پڑے ہیں اترواتا ہے۔ ہاں! جو لوگ اس پر ایمان لائے اس کی حمایت کی اس کی مدد کی اور اس نور کے پیچھے چلے جو اس کے ساتھ نازل کیا گیا وہی کامیاب ہوں گے۔
۱۷۰۔ اور وہ لوگ جو کتاب خدا کو مضبوطی سے پکڑے ہوئے ہیں اور نماز قائم کرتے ہیں بیشک ہم اصلاح کرنے والوں کاا جر ضائع نہیں کرتے۔
(سورۃ الحج ۲۲)
۷۸۔ اور اللہ کی راہ میں ویسا ہی جہاد کرو جیسے جہاد کا حق ہے۔ اسی نے تمہیں برگذیدہ بنایا ہے اور تم پر دین کے بارے میں کوئی تنگی نہیں ڈالی، دین اپنے باپ ابراہیم (علیہ السلام) کا قائم رکھو، اسی اللہ نے تمہارا نام مسلمان رکھا ہے ۔ اس قرآن سے پہلے اور اس میں بھی تاکہ پیغمبر تم پر گواہ ہو جائے اور تم تمام لوگوں کے گواہ بن جائو۔ پس تمہیں چاہیے کہ نمازیں قائم رکھو اور زکوٰۃ ادا کرتے رہو اور اللہ کو مضبوط تھام لو، وہی تمہارا ولی اور مالک ہے۔ پس کیا ہی اچھا مالک ہے اور کتنا ہی بہتر مددگار ہے۔
(سورۃ القصص ۲۸)
۳۵۔ اللہ تعالیٰ نے فرمایا کہ ہم تیرے بھائی کے ساتھ تیرا بازو مضبوط کردیں گے اور تم دونوں کو غلبہ دیں گے فرعونی تم تک پہنچ ہی نہ سکیں گے، بسبب ہماری نشانیوں کے ، تم دونوں اور تمہارے تابعداری کرنے والے ہی غالب رہیں گے۔
(سورۃ لقمان۳۱)
۲۲۔ اور جو (شخص )اپنے آپ کو اللہ تعالیٰ کے تابع کر دے اور ہو بھی وہ نیکو کار یقینا اس نے مضبوط کڑا تھام لیا، تمام کاموں کا انجام اللہ تعالیٰ کی طرف ہے۔
(سور ۃالصفت۳۷)
۱۷۱۔ اور البتہ ہمارا وعدہ پہلے ہی اپنے رسولوں کے لیے صادر ہو چکا ہے۔
۱۷۲۔ کہ یقینا وہ ہی مدد کیے جائیں گے۔
۱۷۳۔ اور ہمارا ہی لشکر غالب(اور برتر) رہے گا۔
۱۷۴۔ اب آپ کچھ دنوں تک ان سے منہ پھیر لیجئے۔
۱۷۵۔ اور انہیں دیکھتے رہیے اور یہ بھی آگے چل کر دیکھ لیں گے۔ [یعنی کچھ زیادہ مدت نہ گزرے گی کہ اپنی شکست اور آپ کی فتح کو یہ لوگ خود اپنی آنکھوں سے دیکھ لیں گے۔ یہ بات جس طرح فرمائی گئی تھی۔ اسی طرح پوری ہوئی۔ ان آیات کے نزول پر بمشکل ۱۴۔۱۵ سال گزرے تھے کہ کفار مکہ نے اپنی آنکھوں سے رسول اللہ ﷺ کا فاتحانہ داخلہ اپنے شہر میں دیکھ لیا، اور پھر اس کے چند سال بعد انہی لوگوں نے یہ بھی دیکھ لیا کہ اسلام نہ صرف عرب پر ، بلکہ روم و ایران کی عظیم سلطنتوں پر بھی غالب آگیا۔ (تفسیر از تفہیم القرآن )]
(سورۃ المومن۴۰)
۵۱۔ یقینا ہم اپنے رسولوں کی اور ایمان والوں کی مدد زندگانی دنیا میں بھی کریں گے اور اس دن بھی جب گواہی دینے والے کھڑے ہوں گے۔
۵۲۔ جس دن ظالموں کو ان کی (عذر) معذرت کچھ نفع نہ دے گی ان کے لعنت ہی ہوگی اور ان کے لیے برا گھر ہوگا۔
(سور ۃ المجادلۃ ۵۸)
۲۱۔ اللہ تعالیٰ لکھ چکا ہے کہ بیشک میں اور میرے پیغمبر غالب رہیں گے۔ یقیننا اللہ تعالیٰ زور آور اور غالب ہے۔
۲۲۔ اللہ تعالیٰ پر اور قیامت کے دن پر ایمان رکھنے والوں کو آپ اللہ اور اس کے رسول کی مخالفت کرنے والوں سے محبت رکھتے ہوئے ہرگز نہ پائیں گے گو وہ ان کے باپ یا ان کے بیٹے یا ان کے بھائی یا ان کے کنبہ (قبیلے) کے (عزیز) ہی کیوں نہ ہوں۔ یہی لوگ ہیں جن کے دلوں میں اللہ تعالیٰ نے ایمان کو لکھ دیا ہے اور جن کی تائید اپنی روح سے کی ہے اور جنہیں ان جنتوں میں داخل کرے گا جن کے نیچے نہریں بہہ رہی ہیں جہاں یہ ہمیشہ رہیں گے، اللہ تعالیٰ ان سے راضی ہے اور یہ اللہ سے خوش ہیں یہ خدائی لشکر ہے، آگاہ رہو بیشک اللہ تعالیٰ کے گروہ والے ہی کامیاب لوگ ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:  امانت و خیانت کا بیان