muhammad Hafeez

پاکستانی ٹیم بڑے مارجن سے کیوں ہارتی ہے؟

EjazNews

پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان کھیلے جانے والے ٹی ٹونٹی ورلڈ کپ کے بارے میں تقریباً سب کو اندازہ تھا کہ یہ میچ انگلینڈ ہی جیتے گا اور اس سوچ کے پیچھے وہ اندازے تھے کہ انگلش ٹیم منجھی ہوئی اور دنیا کی بہترین ٹیموں میں سے ایک ہے دوسرا یہ ان کا ہوم گراؤنڈ ہے. اس کے برعکس پاکستانی ٹیم نئے تجربات پر مبنی ٹیم ہے اور اس ٹیم نے کتنے انٹرنیشنل میچ کھیلے ہیں انگلیوں پر گنے جا سکتے ہیں.
لیکن ٹیم کا اس انداز سے ہارنا عجیب ہے. لیکن یہ اتنا بھی عجیب نہیں کیونکہ ہم نے اس سے پیشتر بھی دیکھا ہے کہ پاکستانی ٹیم کی ایک بہت بڑی کمزوری ہے کہ جب ان پر پریشر پڑتا ہے تو اس پریشر کو کنٹرول کرنے والے اعصاب ان کے پاس نہیں ہیں اور یہ خامی انہیں ہمیشہ بڑے مارجن سے ہرانے کا سبب بنتی ہے.

محمد حفیظ نے اپنے ٹی 20 کیریئر میں 2000 رنز بھی مکمل کر لیے ہیں۔
پاکستان نے بیٹنگ شروع کی تو دونوں اوپنرز نے اچھا آغاز دیتے ہوئے 72 رنز بنائے۔ فخر زمان 36 رنز بنا کر عادل رشید کی گینش پر کیچ آو¿ٹ ہوئے۔دوسرے اوپنر کپتان بابر اعظم نے سات چوکوں کی مدد سے 56 رنز بنائے اور عادل رشید کی ہی گیند پر کیچ آو¿ٹ ہو گئے۔شعیب ملک 14 رنز بنا کر شاٹ کھیلتے ہوئے جورڈن کی گیند پر کیچ آو¿ٹ ہو گئے۔اس کے بعد محمد حفیظ نے انگلینڈ کے باﺅلرز کو بے بس کر دیا اور چار چوکے پانچ چھکے کی مدد سے 69 رنز بنائے سیم کرن نے ان کی وکٹ حاصل کی۔
انگلینڈ کی جانب سے عادل رشید نے دو جبکہ سیم کرن اور جورڈن نے ایک ایک وکٹ حاصل کی ہے۔
196 رنز کے جواب میں انگلینڈ کی ٹیم نے پانچ وکٹوں کے نقصان پر 20ویں اوور کی پہلی گیند پر ٹارگٹ پورا کر لیا۔
انگلینڈ نے بیٹنگ شروع کی تو دونوں اوپنرز نے 66 رنز کی شراکت قائم کی۔جونی بیرسٹو 44 رنز پر شاداب کی گیند پر کیچ آو¿ٹ ہوئے۔دوسرے اوپنر بینٹن کو بھی شاداب خان نے 20 رنز پر ایل بی ڈبلیو آو¿ٹ کیا۔مورگن 66 رنز بنا کر حارث رو¿ف کی گیند پر کیچ آو¿ٹ ہوئے۔معین علی ایک رنز پر شاداب خان کی گیند پر ایل بی ڈبلیو آو¿ٹ ہوئے۔ بیلنگز صرف 10رنز ہی بنا سکے ان کو حارث رو¿ف نے آو¿ٹ کیا۔میلان نے 54 رنز کی عمدہ اننگ کھیلی اور ناٹ آو¿ٹ رہے۔
سیریز کا پہلا ٹی 20 میچ بارش کے باعث بغیر کسی نتیجہ کے ختم ہو گیا تھا۔ اس میچ میں 16.1 اوورز کا کھیل ہوا تھا جس میں انگلینڈ نے چھ وکٹوں کے نقصان پر 131 رنز بنائے تھے۔
پاکستان کی جانب سے عماد وسیم اور شاداب خان نے دو دو جبکہ افتخار احمد نے ایک وکٹ حاصل کی تھی۔

یہ بھی پڑھیں:  ایشیا ء کپ2020منسوخ