kanjar jheel

کینجھر جھیل 10افراد کی لاشیں نکال لی گئیں

EjazNews

کینجھر جھیل کے درمیان میں واقع نوری جام تماچی کا مزار ہے جہاں تک جانے کے لیے لوگ کشتی میں سوار ہوتے ہیں۔عام طور پر جھیل کے کنارے سے نوری جام تماچی کے مزار تک پہنچنے میں 10 سے 15 منٹ لگتے ہیں۔تاہم یہ واضح نہیں ہوسکا کہ پیر کو پیش آنے والے حادثے کی بنیادی وجہ زائد افراد کا کشتی میں سوار ہونا تھا یا کشتی خود کسی حادثے کا شکار ہوئی۔

ایدھی فاونڈیشن کی جانب سے فراہم کردہ معلومات کے مطابق کینجھر جھیل میں کشتی الٹنے سے ڈوبنے والے افراد میں سے 10 کی لاشیں نکال لی گئی ہیں۔ لاشوں کو ٹھٹہ کے مکلی سول ہسپتال سے کراچی کے کورنگی 5 نمبر کے سردخانے میں منتقل کردیا گہا ہے جہاں ان کی تدفین سے متعلق ضروری کارروائی مکمل کی جائے گی۔ابتدائی معلومات کے مطابق بدقسمت خاندان کراچی کے علاقے محمودآباد کا رہائشی تھا۔
دوسری جانب پاک بحریہ نے بھی کینجھر جھیل کشتی حادثے میں لاپتا افراد کی تلاش کے لیے امدادی کارروائیوں میں حصہ لیا۔

یہ بھی پڑھیں:  دو ہندو لڑکیوں کے اغواء پر وزیراعظم کا نوٹس