husban+wife-child

شوہر کو بہترین دوست کس طرح بنایا جاسکتا ہے ، چند مشورے (۲)

EjazNews

دنیا میں محبت کا سمبل تاج محل میاںکی لازوال محبت کا نشان ہے۔ عورت جب مرد کے دل میں جگہ بناتی ہے تو اس کے لئے جنت بھی ہیج ہو جاتی ہے۔ وہ اپنی قربت سے زمین کو جنت بنا سکتی ہے اور جوابی محبت شوہر کو تاج محل جیسی یادگاریں بنانے پر مجبور کر دیتی ہے۔ دوستی ہی کیا سب کچھ عورت کی محبت، پیار، چاہت اور خلوص کی بدولت ممکن ہے۔
شوہر کو بہترین دوست بنانے کے بجائے آپ خود ان کی بہترین دوست بن جائیں۔صبر و اخلاق کا دامن نہ چھوڑیں اور ہمیشہ شمع محبت کو جلائے رکھیں تاکہ اعتماد کا آئینہ بے داغ نظرآئے۔
شوہر دفتر سے گھر آئے تو اس کا استقبال بن سنور کر اور مسکرا کر کرنا چاہئے۔ کیونکہ شوہر کیسا ہی کیوں نہ ہو بیوی کو ہمیشہ محبوبہ کے روپ میں دیکھنا زیادہ پسند کرتا ہے۔
اگر شوہر کی خوبیوں کو اپنی خوبیاں اور خامیو ں کو اپنی خامیاں سمجھ لیا جائے اس کے راز کو راز رکھا جائے عزت و احترام دیا جائے اور ضروریات کا خیا ل رکھاجائے تو شہر بہترین دوست بن سکتا ہے۔
مرد کے اندرونی جذبات کسی ننھے بچے جیسے ہوتے ہیں جو محبت اور توجہ کا متلاشی ہوتی ہے لہٰذا اس کی خواہشات کا احترام کریں بے لوث محبت سے خوشی و غم کو بانٹیں حتی الامکان خندہ پیشانی سے کام لیں اور شوہر سے وابستہ رشتوں کی دل سے عزت و تکریم کریں۔

میاں بیوی کے رشتے کے درمیان منفی تنقید اورانا کی کوئی گنجائش نہیں ہوتی۔ اس رشتے میں دوستی کی بنیاد پیار اور ایک دوسرے کا خیال رکھنے پر ہے۔
شوہر کو اچھا دوست بنانے کے لئے بیوی کو چاہئے کہ وہ اپنے ہر معاملے سے متعلق شوہر سے مشورہ کر ے اور اسی کے مشورے کو اہمیت دے۔ اس کے علاوہ شوہر کے بیرونی معاملات میں دلچسپی کا اظہارکرے۔ شوہر کی پریشانی میں فکر مند ہو اورخوشی میں خوش رہے۔

یہ بھی پڑھیں:  ہمارے معاشرتی ڈھانچے میں عورت کے ساتھ امتیاز کی شکلیں

شوہر اگر بہترین دوست ہو تو یہ دنیا کسی جنت سے کم نہیں لیکن اس جنت کو پانے کے لئے ذرا سی محنت اور قربانی کی ضرورت ہے۔ اگر ہر کام شوہر کی پسند و ناپسند کے مطابق کریں اور اس پر پورا اعتماد کریں اس کی کمزوریوں اور کوتاہیوںسے درگزر کریں تو یہ رشتہ اتنا عظیم اور مضبوط ہو جائے گا کہ اس کو دنیا کی کوئی طاقت کمزور نہیں کر سکے گی۔
شوہر کے ساتھ گفتگو ہمیشہ ہلکے پھلکے خوشگوار موڈ میں کریں ہر وقت یہ احساس مت دلائیں کہ اس پر ذمہ داریاں بڑھ گئی ہیں بلکہ یہ احساس دلائیں کہ آپ بھی اس کے دکھ سکھ کی ساتھی ہیں۔ فرصت کے لمحات میں استطاعت کے مطابق سیرو تفریح کے لئے ضرورت وقت نکالیں۔
در حقیقت شوہر ہی بیوی کابہترین دوست ہر دکھ سکھ کا ساتھی اور غم خوار ہے مگر اسے بہترین دوست بنانے کے لئے خود کو بھلا دیں اور اپنے شوہر میں خود کو تلاش کریں۔اپنی ” میں“کو ختم کریں کیونکہ جہاں انا ہوتی ہے واں پیار نہیں ہوتا اور پیار ہی دوستی ہے۔

اچھا دوست وہ ہے جو ہماری خامیوں کی نشاندہی کرے۔شوہر بہترین قناد ہوتا ہے جس کی تنقید پر برہم ہونے کے بجائے اسے اپنی اصلاح کے لئے استعما ل کریں تو شوہر سے دوستی اور اعتماد کا رشتہ بڑھے گا۔
ازدواجی تعلقات باہمی محبت، اعتماد اور رواداری کے متقاضی ہیں۔ شوہر کے خیالات اواحساسات اور پریشانیاں شیئر کریں مگر بے جا پوچھ گچھ نہ کریں اور اسے ادنیٰ گھر یلو پریشانیوں سے دو رکھیں۔
اگرچہ کہ شوہر کو ایک بہترین دوست بنانا مشکل ہے مگر ناممکن نہیں شوہر کوازدواجی زندگی کے شروع میں ہی اس بات کا احساس دلائیں کہ آپ کو شہر کی ذات میں ہی ایک بہترین دوست کی تلاش ہے۔
شوہرآپ کا مجازی خدا ہے اور رسول اللہﷺ کا ارشاد پاک ہے کہ اگر خدا کے بعد کسی کوس جدے کا حکم ہوتا تووہ عورت کا اپنے شوہر کے لئے ہوتا ، میاں بیوی کا ایک مقدس رشتہ ہے لہٰذا اپنے شوہر کا احترام کریں اس کی ہر خواہش کو اولین ترجیح دیں اور اس کے دل میں یہ احساس پیدا کریں کہ وہی ان کی کل کائنات ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  روپ سروپ اور آپ کی خوراک

بیوی کو سب سے پہلے شوہر کے مزاج اور پسند و ناپسند کو سمجھنا ضروری ہے پھر اپنے مزاج کو اس کے مطابق ڈھالنے کی ہر ممکن کوشش کی جائے اس طرح مزاجوں کا توازن شوہر کو بہترین دوست بنا دے گا۔
شوہر پر پورا اعتماد کریں۔ نرمی ، محبت اور مستقل مزاجی سے اپنی فرمائشیں منوائیں اور اپنے گھر گھر سے کبھی غافل نہ ہوں نیز شوہر کی آمد سے قبل اپنے غصے اور ٹینشن کو رخصت کر دیں۔
شوہر کو بہترین دوست بنانا کوئی مشکل کام نہیں اسے اچھا دوست اس کی بلند، وسیع اور مثبت سوچوں کے ساتھ چل کر ہی بنایا جاسکتاہے۔
اگر شوہر تعلیم یافتہ، باشعور اور با اخلاق ہے تو پھر اعتماد، خلوص ، بے لوث محبت، عزت، بے غرضی ، خوش اخلاقی اور دکھ سکھ میں بغیر کسی صلے اور احسان کے کام آکر شوہر کو بہترین دوست بنایاجاسکتا ہے لیکن ہر وقت کے گلے شکوے اور ضرورت سے زیادہ امید دلوں میں دوری پیدا کرتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  رگ سے پہلے نبض چیک کرو (پریشانیوں کی اہمیت کے لحاظ سے علاج)

بیوی کو چاہئے کہ وہ شوہر کا ادب کرے اور اگر بیوی تعلیم یافتہ ہے تو شوہر پر تعلیم کا رعب نہ ڈالے کیونکہ تعلیم ایک دوسرے کا احترام کرنا سکھاتی ہے۔
انسان کا دل مسکراہٹوں سے جیتا جاسکتا ہے شوہر خواہ کتنا ہی سخت گیر کیوں نہ ہو عورت اپنی تبسم ریزیوں سے شوہر کے دل میں گھر کر سکتی ہے۔ بشرطیکہ اسے زیر لب اور بالائے لب مسکرانے کاڈھنگ آتا ہو ۔ ہر سخت بات کو نرم سمجھ کر سہنا شوہر کو اچھا دوست بنا سکتا ہے۔

جس طرح کائنات کے مالک کو دوست بنانے کے لئے نماز، روزہ، زکوٰة اور حج وغیرہ گفٹ کی شکل میں پیش کئے جاتے ہیں اسی طرح شوہر سے دوستی کی خواہش مند اس کی ہر خواہش کا احترام کرے اور کسی نہ کسی بہانے سے گفت پیش کرے۔
اعتماد اور یقین وہ بہترین نکتہ ہے جو شوہر کو بہترین دوست بناتا ہے۔ اس کی ہر بات پر دل سے یقین کرنا چاہئے اور یہ طعنہ نہیں دینا چاہئے کہ فلاں سہیلی کا شوہر بہت اچھا ہے۔ اگر پریشانی میں ساتھ دیا جائے اور تو چھوٹی چھوٹی باتوں کا خیا ل رکھا جائے تو شوہر خوش بھی رہے گا اور دوست بھی۔