pakistan army spkesperson

آزادی کی قدر مقبوضہ کشمیر کی ان ماؤں سے پوچھیں جو اپنے شہید بیٹوں کو پاکستان کے جھنڈوں میں دفن کرتی ہیں:ڈی جی آئی ایس پی آر

EjazNews

راولپنڈی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے میجر جنرل بابر افتخار کہنا تھا کہ پاکستان اور سعودی عرب کے درمیان تعلقات پر سوال اٹھانے کی ضرورت نہیں ہے۔ پاکستانیوں کے دل سعودی عرب کے ساتھ دھڑکتے ہیں۔ چیف آف آرمی اسٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ کا دورہ سعودی عرب پہلے سے طے شدہ تھا۔ سعودی عرب سے بہترین تعلقات ہیں، رہیں گے اور اس میں کسی کو کوئی شک نہیں ہونا چاہیے۔

مقبوضہ کشمیر پر بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا بھارت منصوبے کے تحت مقبوضہ کشمیر سے مسلمانوں کو بے دخل کرنا چاہتا ہے۔دنیا کا کوئی ظلم ایسا نہیں ہے جو کشمیریوں پر نہ ڈھایا جا رہا ہو۔ بھارت سوچی سمجھی سازش کے تحت کشمیریوں پر ظلم کررہا ہے۔ وہاں خواتین اور بچوں کی حرمت کو پامال کیا جار ہے۔ مقبوضہ کشمیر کے بہادر عوام کو سلام پیش کرتے ہیں۔ مقبوضہ کشمیرکی قیادت ایک سال سے پابند سلاسل ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا پاکستان نے مسئلہ کشمیر کو ہر عالمی فورم پر اٹھایا ہے۔ یو این جنرل سیکرٹری نے بھی مسئلہ کشمیر کے حل کو جنوبی ایشیا کے امن کے لیے ناگزیر قرار دیا ہے۔ بھارت ایل اوسی پر معصوم کشمیریوں کو نشانہ بنا رہا ہے۔ بھارت کی جانب سے سیز فائر کی خلاف ورزی میں بھاری ہتھیاروں کا استعمال کیا جا رہا ہے، جس کا پاک فوج بھرپور جواب دیتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  ریپ کرنے والوں کو کیمیائی یا سرجیکل طریقے سے نامرد بنانے کی تجویز بھی زیر غور ہے:وزیراعظم

انٹرنیشنل میڈیا نے ایل او سی کا دورہ کیا اور شہریوں سےملاقات کی۔ بھارت انٹرنیشنل میڈیا یا یو این مبصرین کو ایل او سی جانے نہیں دیتا ہے۔ آزاد کشمیرمیں یو این مبصرین یا انٹرنیشنل میڈیا کو جانے کی مکمل آزادی ہے اور 22 جولائی کو عالمی میڈیا نے آزاد کشمیر کا دورہ کیا تھا۔ انسانی حقوق کی تنظیموں اور انٹرنیشنل میڈیا نے بھی بھارتی ظلم و جبر کو بے نقاب کیا ہے۔ کشمیر کا مسئلہ اقوام عالم کی نظر میں تصفیہ طلب ہے۔ ایک سال کے اندر اقوام متحدہ میں مقبوضہ کشمیر کا مسئلہ تین بار زیر بحث آیا۔ تحریک آزادی کشمیر کامیاب ہو گی۔ لائن آف کنٹرول کے قریب رہائشیوں کے گھروں میں شلٹرز بنائے جارہے ہیں۔

ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل بابر افتخار نے کہا کہ 14 اگست کی مناسبت سے قوم کو آزادی کے 73 سال مبارک ہوں۔ آزادی ایک بہت بڑی نعمت ہے۔ اس کی قدر مقبوضہ کشمیر کی ان ماؤں سے پوچھیں جو اپنے شہید بیٹوں کو پاکستان کے جھنڈوں میں دفن کرتی ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:  سال 2019ءمیں پاکستان میں رونما ہونے والے اہم واقعات

ان کا کہنا تھا کہ بھارت دنیا میں اسلحہ خریدنے والے ممالک میں سرفہرست ہے تاہم جنگیں اسلحے کے زور پر نہیں جیتی جاتی ہیں۔ بھارت نے کرونا کے دوران بھی ایل او سی پر اشتعال انگیزی جاری رکھی۔ انہوں نے کہا کہ حالیہ عالمی رپورٹ میں بھی بھارت میں دہشت گرد گروپس کی نشاندہی کی گئی ہے۔بھارت پاکستان میں ہونے والی دہشت گردی میں ملوث ہے۔ آپریشن کے دوران 18 ہزار سے زائد دہشت گردوں کو مارا گیا ہے۔بھارت اندرونی ناکامیوں پر پردہ ڈالنے کے لیے ایل او سی پر اشتعال پیدا کرتا ہے۔

میجر جنرل بابر افتخار نے واضح طورپر کہا کہ پانچ رافیل آئیں یا 500، ہم تیار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ رافیل لے آئیں یا ایس 400 ،ہم اپنے دفاع کے لیے مکمل طور پر تیار ہیں۔ محدود وسائل کے ساتھ دشمن کا مقابلہ کرنے کے لیے بھر پورطریقے سے تیار ہیں۔

ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہا کہ افغانستان میں امن کا مطلب پاکستان میں امن ہے۔پاکستان نے افغانستان میں امن کی بحالی کے لیے بھرپور کردار ادا کیا۔ پاک افغان سرحد پر دیر پا اقدامات کیے جارہے ہیں۔ دہشت گردی اور اسمگلنگ میں روک تھام ہو سکے گی۔ 2611 کلو میٹر پر باڑ کا کام مکمل کیا جا چکا ہے۔
انہوں نے کہا کہ پاکستانی افواج اپنی عوام کے ساتھ مل کر اپنے ملک کی حفاظت کے لیے تیار ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  25مارچ 1992جب ہم ورلڈ کپ جیتے

ان کا مزید کہنا تھا پاک ایران بارڈر پر بھی باڑلگانے کا کام جاری ہے۔ بلوچستان میں پانی کی قلت کو دورکرنے پر تیزی سے کام جاری ہے۔ بلوچستان سے پاکستان فوج میں 25 ہزار سپاہی موجود ہیں۔ ملک بھر کے آرمی پبلک سکولز میں بلوچستان سے تعلق رکھنے والے بچے تعلیم حاصل کررہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ احسان اللہ احسان کی مبینہ آڈیو میں دعوے بے بنیاد ہیں۔ احسان اللہ احسان نے دوران حراست ہمیں بہت سی انفارمیشن دیں۔ احسان اللہ احسان کی انفارمیشن سے ہمیں بہت فائدہ ہوا۔ احسان اللہ احسان کو آپریشن کے د وران استعمال کررہے تھے۔