asad_umer_smat_lock_down

10اگست سے ایس او پیز کے تحت سمارٹ لاک ڈائون ختم

EjazNews

وزیر اعظم کی زیر صدارت قومی رابطہ کمیٹی کے اجلاس میں ملک بھر میں ایس او پیز کے تحت ریستوران، تھیٹرز اور سینما ہالز 10اگست سے کھولنے کا فیصلہ کرلیا گیا۔
وزیر ترقی و منصوبہ بندی اسد عمرنے وزیراعظم کے زیر صدارت قومی رابطہ کمیٹی کے اجلاس کے بعد پریس بریفنگ دی جس میں ان کا کہنا تھا کرونا وائرس کے خلاف کوششوں کی کامیابی کے بعد پاکستان بھر میں بیوٹی سیلونز اور ریستوران 10 اگست سے کھولے جا رہے ہیں۔جبکہ تعلیمی ادارے 15 ستمبر سے کھولنے کے متعلق فیصلے کا جائزہ 7 ستمبر کو لیا جائے گا۔
اسد عمر کا کہنا تھا کہ شائقین کے بغیر کھیلوں کی سرگرمی کی اجازت دی جا رہی ہے۔ سیاحت کا شعبہ 8اگست سے کھولا جا رہا ہے۔سیاحتی مقامات کو کھول دیا جائے گا، مزارات، بزنس سینٹر، ایکسپو سینٹرز بھی 10 اگست سے کھولنے کی اجازت دی جارہی ہے۔
وفاقی وزیر کا کہنا تھا پور سمارٹ لاک ڈاؤن ایک مربوط نظام کے تحت چلایا گیا۔ہم نے بے پناہ محنت کی، اور آج بین الاقوامی ادارے بھی پاکستان کو ان ممالک میں شامل کر رہے ہیں جنہوں نے بہترین کام کیا۔ ایک ہفتے سے مشاورت جاری تھی، صوبوں سے بھی بات کی گئی اور سفارشات تیار کی گئیں، جن پر آج فیصلہ ہوا۔
ان کا کہنا تھا جتنی چیزوں کا ذکر کیا جا رہا ہے، ان کے حوالے سے ایس او پیز تیار ہو رہے ہیں اور ان کے مطابق ہی ان پر عمل درامد ہو گا۔
ا ن کا مزید کہناتھاکھیلوں کی سرگرمیاں اور جم کھولنے کی بھی اجازت دی جا رہی ہے۔جن کھیلوں میں جسمانی ٹکراؤ نہیں ہوتا اور سماجی فاصلہ رکھا جا سکتا ہے ان کے انعقاد کی اجازت دی جا رہی ہے لیکن شائقین کو اجازت نہیں ہو گی۔کبڈی، رگبی ، باکسنگ وغیرہ جیسے کھیلوں کی اجازت نہیں۔ انہوں نے بتایا کہ ایس او پیز کے ساتھ ٹرین میں اور ہوائی سفر کیا جا سکے گا۔ٹرینوں اور جہازوں میں سیٹیں چھوڑ کر بیٹھنے کی بندش ستمبر کے آخر تک برقرار رہے گی۔ اور دوبارہ صورت حال کا جائزہ لیا جائے گا، تاہم امکان یہی ہے کہ یکم اکتوبر سے بات نارمل ہو جائے گی۔
انہوں نے بتایاکہ مارکیٹس اور دکانیں اسی حساب سے کھلیں گی جیسے کرونا سے پہلے تھا، وقت کی پابندی اٹھائی جا رہی ہے۔ اب دکانیں اور کاروبار پرانے نظام کے تحت چلائے جا سکیں گے۔مزاروں اور ڈبل سواری پر سے بھی پابندی ختم کی جا رہی ہے۔
ان کا کہنا تھا اگر احتیاط سے کام نہ لیا گیا تو ان سہولتوں کے منفی اثرات بھی سامنے آ سکتے ہیں۔ اگر خدانخواستہ پھر سے صورت حال خراب ہوئی تو بندشوں کا سلسلہ پھر سے شروع کیا جا سکتا ہے۔
انہوں نے عوام سے اپیل کی کہ وہ پہلے سے بڑھ کر احتیاط کریں۔ 14 اگست پر بھی احتیاط کی جائے۔آگے محرم آ رہا ہے، علما سے مل کر ایس او پیز بنائے گئے ہیں، جس کی معلومات عوام کو دی جائیں گی۔

یہ بھی پڑھیں:  بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو کیس