corona-lahore

پنجاب میں سخت لاک ڈائون، دفاترکھلے ہوں گے

EjazNews

وزیر اطلاعات پنجاب فیاض الحسن چوہان کا کہنا ہے کہ کرونا وائرس کے پھیلاو کو روکنے کے لیے 28 جولائی 12 بجے سے آئندہ 9 روز تک سخت لاک ڈاون کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔انہوں نے کہ عیدالاضحیٰ سے قبل تمام مویشی منڈیوں میں سختی سے اسٹینڈرڈ آپریٹنگ پروسیجرز(ایس او پیز) پر عملدرآمد کروایا جائے گا۔
مذکورہ فیصلہ وزیراعلیٰ ہاؤس پنجاب میں صوبائی وزیر قانون راجا بشارت کی زیر صدارت کابینہ کمیٹی برائے انسداد کرونا کے اجلاس میں کیا گیا۔
انہوں نے کہا کہ صو بے میں لاک ڈاؤن کے دوران میڈیکل اسٹورز، گروسری اسٹورز، ٹرانسپورٹ اور دفاتر کھلے ہوں گے اور صرف مارکیٹیں بند ہوں گی۔
خیال رہے عید الفطر پر عوام نے لاک ڈاؤن پر پوری طرح عمل نہیں کیا تھا جس کے باعث کورونا کیسز میں اضافہ ہوا۔ عیدالاضحی کےموقع پر حکومت نے فیصلہ کیا ہے کہ کرونا وائرس کا پھیلاؤ روکنے کیلئے سخت اقدامات کیے جائیں۔
وفاقی حکومت نے تمام تفریحی مقامات کو بند کر دیا ہے۔پاکستان میں کرونا وائرس کے مریضوں کی تعداد کافی حد تک کم ہوگئی ہے اور حکومت نہیں چاہتی کہ اس میں مزید اضافہ ہو۔
نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر اور قومی ادارہ برائے صحت نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ عید الاضحی پر اگر عوام نے ایس او پیز پر عمل نہ کیا تو پاکستان میں کرونا مریضوں کی تعداد ایک بار پھر بڑھ سکتی ہے جس پر قابو پانے میں کم سے کم دو ماہ لگ سکتے ہیں۔
طبی ماہرین اور وبائی بیماریوں سے نمٹنے والے اداروں کی سفارشات پر حکومت نے عید الاضحی پر سخت لاک ڈاؤن کا فیصلہ کیا ہے اور اس کیلئے انتظامات مکمل کیے جا رہے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:  علما اور حکومت میں 20نکاتی ایجنڈے پر اتفاق