Tik_tok

پی ٹی اے کے حتمی نوٹس کے بعد ٹک ٹاک نے وضاحت جاری کر دی

EjazNews

پی ٹی اے کی جانب سے ٹک ٹاک کو حتمی نوٹس جاری کیا گیا تھا کہ اگر اخلاق سے گرا ہوا مواد نہ ہٹایا گیا تو ٹک ٹاک کو بند کر دیا جائے گا۔ اب ٹک ٹاک کی جانب سے اس نوٹس کے جواب میں وضاحت سامنے آگئی ہے۔ٹک ٹاک کی جانب سے حتمی نوٹس کا جواب دیتے ہوئے جاری کیے گئے بیان میں کہا گیا کہ ایپ انتظامیہ کی اولین ترجیح قانون کی پاسداری کے ذریعے ایپ کے اندرونی ماحول کو محفوظ اور مثبت رکھنا ہے۔

ٹک ٹاک نے کسی بھی نامناسب مواد کی بروقت شناخت اور اس پر نظرثانی کے لیے متعدد ٹیکنالوجیز اور جدید حکمت عملی کا نفاذ کر رکھا ہے تاکہ نامناسب مواد صارفین تک نہ پہنچے۔بیان میں دعویٰ کیا گیا کہ جو بھی مواد ٹک ٹاک کے ضوابط کے برعکس ہوتا ہے، اس مواد کو نہ صرف فوری طور پر ہٹادیا جاتا ہے بلکہ ایسا مواد اپ لوڈ کرنے والے افراد پر جرمانہ بھی عائد کیا جاتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  حارث رؤف نے آسٹریلوی ٹی ٹونٹی میں پاکستان کا نام روشن کر دیا

ٹک ٹاک کے مطابق ایپ انتظامیہ نے صارفین کو متعدد کنٹرولز، تجزیاتی سہولیات اور راز داری کے اختیارات فراہم کر رکھے ہیں جنہیں استعمال کرتے ہوئے کسی بھی نامناسب مواد کو رپورٹ کرنا آسان بن جاتا ہے اور ساتھ ہی یہ سہولیات صارفین اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کو کسی بھی ناموزوں مواد کی نشاندہی کرنے میں مدد بھی فراہم کرتے ہیں۔

ویڈیو شیئرنگ ایپ کی جانب سے دعویٰ کیا گیا کہ گزشتہ سال دنیا بھر میں نامناسب ویڈیوز کی شکایات کے بعد 98 فیصد سے زیادہ ناموزوں ویڈیوز ہٹائی گئی تھیں۔
بیان میں ٹک ٹاک کی جولائی تا دسمبر 2019 کی رپورٹ کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا گیا کہ گزشتہ سال ہٹائی گئی نامناسب ویڈیوز میں سے 84 فیصد ویڈیوز ایسی تھیں جنہیں کسی بھی شخص نے نہیں دیکھا تھا۔
بیان میں دعویٰ کیا گیا کہ اسی مدت کے دوران پاکستان میں بھی صارفین کی جانب سے اپ لوڈ کی گئیں 37 لاکھ 28 ہزار 162 نامناسب ویڈیوز کو نشر ہونے سے روکا گیا۔

یہ بھی پڑھیں:  سال 2019ءمیں پاکستان میں رونما ہونے والے اہم واقعات

بیان میں ٹک ٹاک انتظامیہ نے اس عزم کا اظہار بھی کیا کہ نامناسب مواد کی تشہیر کو روکنے کے لیے مزید حفاظتی اقدامات کرکے صارفین کے احترام اور اخلاقیات کو یقینی بنایا جائے گا۔
بیان میں کہا گیا کہ ٹک ٹاک کی جانب سے انٹرنیٹ ریگولیٹر حکام کے ساتھ عملی مذاکرات کو بھی فروغ دیا جائے گا تاکہ وہ ایپیلی کیشن کی پالیسیوں سے آگاہ ہوں اور ان کے تعاون سے صارفین کے اطمینان اور تحفظ کو یقینی بنایا جائے گا۔