covid19

دنیا بھر میں کروناوائرس سے 6لاکھ سے زائد افراد ہلاک ہو چکے ہیں

EjazNews

دنیا بھر میں کرونا وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد ایک کروڑ 44 لاکھ22ہزار سے تجاوز کر گئی ہے جبکہ اب تک اس مرض کے باعث 6 لاکھ5ہزار سے زائد افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔اب تک 86لاکھ 12ہزار سے زائد افراد صحتیاب ہو چکے ہیں۔
دنیا میں کرونا سے سب سے زیادہ متاثر ہونے والا ملک امریکہ ہے جہاں 38 لاکھ 33ہزار سے زیادہ افراد اس مرض سے متاثر ہیں جبکہ اب تک ایک لاکھ 43 ہزار سے زائد افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔
دوسرے نمبر پر موجودہ سب سے زیادہ متاثرہ ملک برازیل میں اب تک 78ہزار 817سے زیادہ لوگ ہلاک جبکہ 20 لاکھ 75 ہزار سے زیادہ مہلک وائرس کا شکار ہو چکے ہیں۔
بھارت کرونا وائرس سے متاثر ہونے والا تیسرا بڑا ملک ہے جہاں مریضوں کی تعداد 11 لاکھ 18 ہزارسے زائد ہے اور 27 ہزار 503 افراد جان کی بازی ہار چکے ہیں۔
روس میں کرونا سے 7 لاکھ 71 ہزار 546 افراد متاثر ہیں اور اموات کی مجموعی تعداد 12 ہزار 342 ہو گئی ہے۔
جنوبی افریقہ میں کرونا سے ہلاکتوں کی تعداد 5 ہزار سے بڑھ گئی ہے جبکہ 3 لاکھ 64 ہزار 328 افراد متاثر ہوچکے ہیں۔
پیرومیں کرونا سے ہلاکتوں کی تعداد 13 ہزار 187 ہو گئی ہے جبکہ مجموعی کیسز کی تعداد 3 لاکھ 53 ہزار سے زائد ہے۔
میکسیکو میں3 لاکھ 44 ہزار 224 افراد میں کرونا وائرس کی تشخیص ہوچکی ہے اور 39 ہزار 184 افراد جان کی بازی ہار چکے ہیں۔
کرونا وائرس سے چلی میں 3 لاکھ 30 ہزارسے زائد افراد متاثر ہیں اور 8 ہزار 503 جاں بحق ہوچکے ہیں۔
اسپین میں کرونا سے ہلاکتوں کی تعداد 28 ہزار420 ہوگئی ہے جبکہ مجموعی کیسز کی تعداد 3لاکھ 7 ہزار سے زائد ہے۔
برطانیہ میں کرونا سے اموات کی تعداد 45 ہزار 300 ہو گئی ہے جبکہ 2 لاکھ 94 ہزار سے زائد افراد کورونا وائرس سے متاثر ہیں۔
برطانیہ میں کرونا ٹیسٹ اینڈ ٹریس سسٹم لاگو ہے اور کرونا مریضوں سے ملاقات کرنے والوں کو آئسولیٹ کیا جا رہا ہے۔
ایران میں کرونا وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد دو لاکھ 73 ہزار 778 ہوگئی ہے اور 14 ہزار 188 متاثر ہیں۔
چین سے دنیا بھر میں یہ وائرس پھیلا ہے اور اس وائرس ابھی تک دنیا کی جان نہیں چھوڑی ہے اس کی ویکسین بھی ابھی تک کوئی تیار نہیں ہو سکی ۔ دعوے تو بہت سے ممالک کی جانب سے سامنے ہے لیکن حقیقت میں کچھ بھی نہیں ہے۔ اس کا صرف ابھی تک ایک ہی علاج ہے اور وہ ہے احتیاطی تدابیر پر جتنا ہو سکے عمل کیا جائے۔

یہ بھی پڑھیں:  کیا جاپان کے نئے شہنشاہ نارو ہیٹو ، اپنے والد کی روایات برقرار رکھ سکیں گے