kashmir_flag

کشمیریوں کی پاکستان سے الحاق کی قرارداد منظوری کا دن

EjazNews

19جولائی 1947کو سری نگر میں آل جموں و کشمیرمسلم کانفرنس کے اجلاس میں پاکستان سے الحاق کی قرار داد متفقہ طور پر منظور کی گئی تھی۔26اکتوبر 1947ء کے بعد بھارتی غاصب فوج نے نہتے کشمیریوں کی آزادی کو بندوق کے بل پر روک لیا۔ بھارتی فورسز کشمیر میں داخل ہوئیں اور ظلم و ستم کے پہاڑ آج تک مظلوم کشمیریو ں پر ڈھا رہی ہے۔
کشمیریوں نے پاکستان سے الحاق کیلئے قرار داد منظور کی تھی اور اس کی یاد میں آج ہم یوم الحاق پاکستان منارہے ہیں۔
وزیراعظم عمران خان نے سوشل میڈیا پر لکھا ہے کہ کشمیریوں کا حق خود ارادیت یواین سکیورٹی کونسل نے تسلیم کر رکھا ہے اور آج ہم ایک بار پھرکشمیریوں کی حق خود ارادیت کی جدوجہد میں ساتھ دینے کےعزم کی تجدید کرتے ہیں۔ پاکستانی کشمیریوں کی بھارتی حکومت کے مظالم کے خلاف جدجہد میں ساتھ دیتے رہیں گے۔ کشمیریوں کو ایک دن ضرور انصاف ملے گا۔
وفاقی وزیراطلاعات شبلی فراز نے کہا ہے کہ آج ہم یوم الحاق پاکستان کے تاریخی موقع کو یاد کرتے ہیں۔ آج کے دن اہلِ کشمیر نے پاکستان کے ساتھ الحاق کی قرارداد منظور کی۔ ہم کشمیری عوام سے اپنے عہد کی تجدید کرتے ہیں، حقِ خودارادیت کی جدوجہد میں کشمیریوں کےساتھ کھڑے ہیں۔ اہل کشمیر کیلئےخودارادیت کا حق سلامتی کونسل کی جانب سےتسلیم شدہ ہے۔ کشمیری عوام نسل پرست بھارتی سرکارکے ظالمانہ ہتھکنڈوں کےخلاف صف آرا ہیں۔
یوم الحاق پاکستان پر وزیراعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر نے اپنے پیغام میں کہا کہ قرارداد الحاق پاکستان کے پیچھے کشمیری عوام کی منشا تھی۔قرارداد کسی جماعت کی جنرل کونسل کا اجتماع نہیں تھا کشمیری عوام کی خواہش تھی جس کے تناظر میں تحریک آزادی کا آغاز ہوا۔
راجہ فاروق حیدر نے اپنے پیغام میں کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں تحریک آزادی کی بنیاد جولائی کی قرارداد الحاق پاکستان ہے اور اس نے کشمیریوں کیلیے راستہ متعین کیا۔
ان کا مزید کہنا ہے کہ کشمیر سے آنے والے دریائوں کا پانی پاکستان کے لیے لائف لائن ہے، بھارت سوچے سمجھے من صوبے کے تحت پاکستان کی لائف لائن پر وار کر رہا ہے۔ مظلوم کشمیری پاکستان اور مسلم امہ کی جانب دیکھ رہے ہیں، مسلم امہ کشمیریوں کی مایوس نہ کرے۔

یہ بھی پڑھیں:  حجاج کرام کو 25سے 58ہزار روپے تک رقم واپس کی جائے گی