imamul haq

ڈومیسٹک سیزن میں 8سو سے زائد رنز بنا کر ٹیم کی سلیکشن کا اہل ہوا تھا

EjazNews

امام الحق پاکستان ٹیم کے مایہ ناز بیٹس مینوں میں شامل ہیں انہوں نے کرکٹ کی مشہور ویب سائٹ کرک انفو کو ایک انٹرویو دیا جس میں ان کا کہنا تھا ڈومیسٹک سیزن میں8سو سے زائد رنز بنا کر ٹیم کی سیلیکشن کے لیے اہل ہوا تھا اور اس وقت کے کوچ مکی آرتھر نے میرا انتخاب کیا تھا۔ میڈیا پر مسلسل تنقید کی وجہ سے مجھ پر بہت زیادہ دباؤ تھا مگر بیٹنگ کوچ گرانٹ فلاور نے مجھے بہت اعتماد دیا۔امام الحق نے کہا کہ پہلے میچ میں سنچری اسکور کرنے کے بعد میرے اعتماد میں بہت اضافہ ہوا، ورلڈ کپ کے دوران میں نے 40 کی اوسط سے رنز بنائے تاہم مجھ پر تنقید کا سلسلہ جاری ہے۔
جب ان سے پوچھا گیا کہ فخر زمان کے ساتھ بلے بازی کرتے وقت ٹیم انتظامیہ کی جانب سے لمبی باری کھیلنے کا رول دیا جاتا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ میں نے جتنی بھی ٹیسٹ کرکٹ کھیلی وہ آسٹریلیا، جنوبی افریقہ اور انگلینڈ میں کھیلی ہے جس کی وجہ سے میں کوئی لمبی اننگز نہیں کھیل سکا کوشش ہے کہ ٹیسٹ کرکٹ میں بھی اچھی کارکردگی دکھاؤں۔پاک بھارت میچ سے متعلق ان کا کہنا تھا کہ 2011 کاعالمی کپ اور 2012 کا ایشیاء کپ کا پاک بھارت میچ میں نہیں دیکھ سکا، اس میچ کا ایک الگ ہی پریشر ہوتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  جب چیزیں ہمارے حق میں ہوتی ہیں تو اچانک بارش آ جاتی تھی:مصباح الحق