laughing

مسکراہٹیں

EjazNews

پٹھان اور سردار
ایک پٹھان بادام بیچ رہا تھا
سردار :یہ کھانے سے کیا ہوتا ہے
پٹھان : بادام کھانے سے دماغ تیز ہوتا
سردار :وہ کیسے
پٹھان : یہ بتاﺅ ایک کلو چاول میں کتنے دانے ہوتے ہیں
سردار پتہ نہیں۔
اس کے بعد پٹھان نے اسے ایک بادام کھلایا اوربولا ایک درجن میں کتنے بادام ہوتے ہیں ۔
سردار: بارہ دانے ہوتے ہیں۔
پٹھان :دیکھو نہ دماغ تیز ہوا۔
سردار یار یہ تو بہت کام کی چیز ہے دو کلو دے دو
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
چرسی
ایک چرسی نے آنکھوں کا عطیہ دیا
ڈاکٹر نے پوچھا آپ کچھ کہنا چاہتے ہیں
چرسی ہاں جسے بھی آنکھیں لگاﺅ اسے سگریٹ کے دو کش لگا دینا کیونکہ یہ آنکھیں دو کش کے بعد ہی کھلتی ہیں
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تین دوست
ایک بار تین دوست کھانا کھانے گئے ۔اتنے میں بادل آگئے انہوں نے فیصلہ کیا کہ ایک کو چھتری لانے کیلئے بھیجا جائے۔
چنانچہ ایک دوست چھتری لینے چلا گیااس نے شرط رکھی میرے آنے تک کوئی کھانے کو ہاتھ نہیں لگائے۔
پانچ گھنٹے گزر گئے وہ نہ آیا تب انہوں نے فیصلہ کیا کہ اب کھانا کھا لینا چاہیے جیسے ہی انہوں نے کھانے کی طرف ہاتھ بڑھایا دروازے کے پیچھے سے آواز آئی خبردار اگر کھانے کو ہاتھ لگایا تو میں چھتری لینے نہیں جاﺅ گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
ایک شخص کی مرتے وقت وصیت
بیٹا تم ڈیفنس والے پانچ بنگلے لے لینا۔
بیٹا تم سے میں بہت پیار کرتاہوں، کلفٹن والی 20کھوٹیاں میں تمہیں دے رہا ہوں اور بیگم صدر والے 11فلیٹ تمہارے۔
پاس کھڑی نرس بہت متاثر ہوئی اور اس کی بیوی سے بولی آپ کتنے خوش قسمت ہیں آپ کے شوہر کتنے امیر ہیں۔
بیوی بولی کہاں کے امیر یہ دودھ والا ہے اپنے گاہکوں کے نمبر بتا رہا ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
رانگ نمبر
شرارتی لڑکا ہیلو فریج ہے ۔
آدمی ہے آپ کون ؟
لڑکا فریج چل رہا ہے ؟
آدمی ہاں چل رہا ہے۔
پھر پکڑ لو ورنہ بھاگ جائے گا۔
تھوڑی دیر بعد وہی لڑکا دوبارہ فون کرتا ہے ہیلو فریج ہے نہیں ہے ۔
لڑکا میں نے کہا تھا نہ کہ پکڑ لو ورنہ بھاگ جائے گا۔
۔۔۔۔۔۔
یادیں
ایک دادا اور دادی نے اپنی جوانی کے دنوں کو یاد کرنے کا پروگرام بنایا
انہوں نے کہا ہم پھر دریا کے کنارے ملیں گے
دادا تیار ہو کر ہاتھ میں پھول لے کر دریا کے کنارے چلا گیا۔ ٹھنڈی ہواﺅں میں انتظار کرنے لگا لیکن دادی نہ آئی۔
دادا کو بہت غصہ چڑھا جب واپس آیا تو دادی کرسی پر بیٹھی مسکرا رہی تھی ۔
داد ا: تم کیوں نہیں آئی؟
دادی :امی نے جانے نہیں دیا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
بدمزاج باس
ایک بدمزاج شخص نے قدرے معذراتانہ لہجے میں اپنے لہجے میں کہا کہ میں اکثر تمہیں بلا وجہ ڈانڈتا رہتا ہوں۔ تمہیں ہمیشہ مسکرا کر خاموش ہو جاتے ہو یا تم اپنی ایسی غلطی تسلیم کر لیتے ہو جو تم سے سر زد ہوئی نہیں ہوتی۔
آج میں یہ سمجھنے پر مجبور ہو گیا ہوں کہ مجھے ایسا رویہ اختیار نہیں کرنا چاہیے ۔
باس کی بات سن کر خوشی سے مسکرایا اور جلدی سے بولا سر میرے والد مرحوم کہا کرتے تھے حسن سلوک سے کمینے سے کمینہ انسان بھی موم ہو جاتا ہے۔ انہوں نے سچ کہا تھا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔
ٹکٹ چیکر
ٹرین میں ایک لڑکے نے ٹکٹ چیکر سے کہا کہ مجھے صبح 4بجے نواب شاہ سٹیشن پر اترنا ہے پلیز مجھے جگا دینااور اگر میں نہ جاگو ںتو مجھے زبردستی ٹرین سے اتار دینا ۔صبح میں نے باس کو انٹرویو دینے جانا ہے۔
صبح 8بجے جب لڑکے کی آنکھ کھلی تو نواب شاہ بہت پیچھے رہ گیا تھا اور ٹرین حیدرآباد پہنچ چکی تھی۔
لڑکے نے ٹکٹ چیکر کو کہیں سے ڈھونڈا اور اسے برا بھلا کہا۔ لوگوں نے ٹکٹ چیکر سے کہا کہ یہ تمہیں اتنا برا بھلا کیوں کہہ رہا اور تم خاموش کھڑے ہو بولتے کیوں نہیں ہو۔
ٹکٹ چیکر: میں یہ سوچ رہا ہوں کہ جس کو میں نے زبردستی ٹرین سے اتارا تھا وہ مجھے کتنی گالیاں دے رہا ہوگا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
مولوی
نکاح کے بعد دولہا مولوی سے
مولوی: آپ فیس بیوی کی خوبصورتی کے مطابق دو ۔
دولہا نے سو روپے دے دئیے ۔
مولوی کو بڑا غصہ آیا اچانک ہوا سے دلہن کا گھونگھٹ اٹھ گیا ،مولوی مسکرایااور کہا کہ بیٹا یہ لو 80روپے بقایا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
خواہش
ایک پروفیسر شادی شدہ زندگی پر تقریر کر رہا تھا۔
کون چاہتا ہے اس کی بیوی ہلاک ہو جائے سب بیٹھے رہے کسی نے ہاتھ کھڑا نہ کیا ۔
پھر اچانک ایک آدمی بولا
پروفیسر آدمی سے کیا آپ چاہتے ہیں آپ کی بیوی ہلاک ہو جائے، آدمی چالاکی سے میں تو سمجھا چالاک ہو جائے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

یہ بھی پڑھیں:  چلو کچھ مسکرا لیتے ہیں