cow gober soap

گائے کے گوبر کا صابن، بھارتی حکومت کا نیا کارنامہ

EjazNews

بھارتی حکومت نے گائے کے گوبر سے بنا ہوا صابن، مارکیٹ میں متعارف کرادیا ہے۔ جس کے بارے میں یہ دعویٰ کیا جارہا ہے کہ یہ انسانی جلد کے لئے بہت مفید ہے اور فطری ہونے کی وجہ سے اس کے کوئی منفی اثرات نہیں ہیں۔ اس میں کوئی کیمیکل استعمال نہیں کیا گیا جبکہ مارکیٹ میں دستیاب باقی تمام صابن جلد کو ن قصان پہنچانے والے کیمیکلز سے تیار کئے جاتے ہیں۔ اس صابن کو بھارتی حکومت کے زیراہتمام چلنے والے ایک ادارے گرامو ڈھوگ ڈیپارٹمنٹ نے تیار کیا ہے۔ اس کا افتتاح یونین منسٹر نیتن گرکاری نے کیا ہے۔ جبکہ بھارتی صارفین اگرچہ اس صابن کا خیر مقدم کیا ہے لیکن صارفین میں یادہ جوش و خروش اس لئے نہیں کہ اس کی قیمت زیادہ ہے۔ مارکیٹ میں اس سے پہلے آم سے بنا ہوا صابن 40-30روپے میں دستیاب ہے لیکن گوبر سے بنا ہوا صابن 125روپے میں فروخت ہوتا ہے ۔ صابن کی تعارفی تقریب کے موقع پر یونین منسٹر نے کہا کہ آئندہ دو برسوں میں اس صابن کی فروخت سے 10ہزار کروڑ روپے کی آمدنی ہوگی۔
اس سے پہلے گائے کے گوبر فیس مساج اور چہرے کو خوبصورت بنانے والی کریمیں بھی تیار ہو چکی ہیں۔ بابا رام دیو کی اربوں روپے کی کمپنیا ں اپنے تقریباً تمام پراڈکٹس میں گائے کا پیشاب استعمال کرتی ہیں اور وہ دیسی گھی سے لے کر کھانے پینے کی بہت سی اشیاء تیار کرتے ہیں ۔

یہ بھی پڑھیں:  برگر نہ لانے پر بیوی نے شوہر سے طلاق کا مطالبہ کر دیا