eat front of mirror

شیشے کے سامنے بیٹھ کر کھائیے

EjazNews

سماجی ماہرین کو بھی نت نئی سوجتی ہے۔ اب جاپانی ماہرین نے کھانے کو مزیدار بنانے کا ایک طریقہ ڈھونڈ لیا ہے۔جاپان کی یونیورسٹی ناگو یا یونیورسٹی کے محققین نے 65سے 74سال کے انسانوں پر ایک زبردست تحقیق کی ۔ انہیں آئینے کے سامنے بٹھایا اورکھانے کو پاپ کون دئیے۔ شیشے کے سامنے بیٹھ کر کھانے میں انہیں بہت مزہ آیا ۔اسی معیار کی پاپ کان جب شیشہ ہٹا کر کھانے کو دی گئی تو ان کا مزہ کرکرہ ہو گیا ، تب ڈاکٹر ریوز ا بور ناکاتا کو پتہ چلا کہ شیشے کے سامنے بیٹھ کرکھانے سے مزہ دوبلاہوجاتا ہے، ایسا کیوں ہوا، اس پر بھی سائنسدانوں نے تحقیق کی ۔ ان کا اندازہ ہے کہ شیشے کے سامنے بیٹھ کر کوئی بھی چیز کھانے والے کو یوں لگتا ہے جیسا اس کے سامنے کوئی چیز جسمانی طور پر اس کے سامنے ہے۔16 بالغوں نے ایسی صورتحال محسوس کی۔ تجربے کے دوران ان لوگوں کوپہلے آئینے کے سامنے بٹھایا گیا اور پھر آئینہ ہٹا کر انہیں پاپ کون پیش کیے گئے۔ اس دوران انہیں پاپ کون کھانے والوں کی ویڈیو بھی دکھائی گئی۔ شیشے کے سامنے بیٹھ کر کھانے والوں کو اتنا مزہ آیا کہ وہ اپنی ضرورت سے زیادہ کھا بیٹھے۔ تب سائنسدانوں کو پتہ چلا کہ شیشے کے سامنے بیٹھ کر کھانے سے مٹھا س میں 25 فیصد اور خوبی میں 21فیصد اضافہ ہو جاتا ہے اور معیار بھی 12 فیصد بہتر لگتا ہے۔ ڈاکٹر ریوز ا بور ناکاتا کے مطابق زیادہ عمر والے لوگوں کو کھانے سے زیادہ مزہ آیا ان کا ڈپریشن بھی کم ہوا اور ان کو مزہ بھی زیادہ آیا۔

یہ بھی پڑھیں:  سائنس جیت گئی حسن ہار گیا