bill+warren

2ارب پتی بل گیٹس اور وارن بوفے تاش کے پتوں کے شوقین کیوں ہیں؟

EjazNews

امریکی صحافی رائل بائف نے بل گیٹس اور وارن بوفے کے مشاغل پر ایک تفصیلی کالم لکھاتھا۔ جس میں اس نے لکھا یہ دونوں ارب پتی تاش کے بہت شوقین ہیں لیکن دونوں کی سوچ جداگانہ ہے۔ بل گیٹس سائنسی ذہن کے حامل اور وارن بوفے اپنے تجربوں سے سیکھنے میں دلچسپی رکھتے ہیں۔ دونوں اس گیم کا اپنے آپ کو شاگرد سمجھتے ہیں اور انہوں نے برج کی عالمی چیمپیئن آس برگ کو اپنا ٹیوٹر رکھا۔ آس بر کہتی ہیں بل بہت سائنسی ذہن کے آدمی ہیں وہ اپنی سوچ کے مطابق عمل کرتے ہیں جبکہ وارن بوفے کھیل کو انجوائے کرتے ہیں ان کی جبلت بہت اچھی ہے۔ بل گیٹس ایک خاص طریقے کے تحت گیم کو کھیلتے ہیں جبکہ بوفے اپنی دلچسپی سے اسے ایک پلاننگ سیچنے کی کوشش کرتے ہیں جبکہ دونوں ارب پتی اس کھیل کو صرف اس لیے کھیلتے ہیں کہ وہ اس سے اپنی سٹرٹیجی پلان کرنا سیکھتے ہیں۔ آس بر کے مطابق برج کے شوقین دراصل بہت اچھے پلانر بن سکتے ہیں یا بہت اچھے پلانر ہی اس کھیل کے ماہر ہو سکتے ہیں کوئی آدمی برج کا اچھا کھلاڑی اس وقت تک نہیں بن سکتا جب تک کہ وہ کھیل کے تمام مراحل کو پورے طریقے سے پلان نہ کر لے اور ایک منصوبہ نہ بنالے۔ وارن بوفے کی اس میں دلچسپی اس قدر زیادہ ہے کہ کھیل میں مگن ہونے کے دوران اسے آس پاس کی کوئی خبر نہیں ہوتی کچھ بھی ہو جائے اس کی نظر نہیں پڑتی۔
کبھی کبھی گیم کے آغاز میں شکست بھی ہو سکتی ہے۔ لیکن شکست کے کچھ اسباب بھی ہوتے ہیں۔ ان اسباب کو دور کرنا اور اپنی ایسی حکمت عملیوں پر قابو پانا جو ناکامیوں کا باعث بنتی ہیں۔ یہ گیم ناکامیوں پر قابو پانا اور اسے اپنی ناکامیوں کو کامیابیوں میں بدلنا کا سبق سکھاتی ہے۔ اس طرح اس گیم میں بزنس کو آگے بڑھانے کے لیے کئی سبق ہیں۔ ایک اور سبق یہ ہے کہ آپ اپنے پارٹنر سے اس کا بہترین تصور کیسے حاصل کر سکتے ہیں۔ آپ کے مدمقابل آپ کا حریف جو چالیں چل رہا ہوتا ہے، آپ اس کی چالوں سے بھی بہت کچھ سیکھ سیکھتے ہیں اور یہی پھر آپ اپنے منیجر اور دوسرے ملازمین کو بھی منتقل کر سکتے ہیں۔ آس بر تاش کی مایہ ناز کھلاڑی ہیں لیکن ایک زمانے میں وہ خود بینکنگ کی انڈسٹری سے منسلک تھی ۔18سال کی عمر میں انہوں نے اس کھیل میں اعلیٰ مقام حاصل کر لیا تھا۔ شروع شروع میں انہوں نے آن لائن گیم بوفے کے ساتھ کھیلنا شروع کی پھر دونوں کی جوڑی بن گئی اور سال میں دو دفعہ ٹورنامنٹ بھی ہوتے۔ کھیل کے دوران بل گیٹ اور وارن اپنی کمپنیوں کے بارے میں بات کرتے ہیں۔ نئے پراجیکٹ کی بات کرتے ہیں، آرٹی فیشل مصنوعی ذہانت کی بات ہوتی ہے۔ ایٹمی پھیلاﺅ اور عدم پھیلاﺅ کا بھی ذکر ہوتا ہے، مستقبل کیسا ہوگا، سیاست کی دنیا اور کاروبار پر کیا اثرات ہوں گے یہی ان کا موضوع سکن ہوتا ہے یہ کھیل محض کھیل تک محدود نہیں رہتا اس میں مستقبل کی منصوبہ بندی اور عالمی سیاست بھی زیر بحث آجاتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  ایک ٹویٹ 31کروڑ 40لاکھ میں فروخت