jadh raliway

جدہ میں حرمین ریلوے سٹیشن میں آتشزدگی؟

EjazNews

سعودی عرب کے شہر جدہ میں حرمین ریلوے سٹیشن میں آتشزدگی کے باعث 10 افراد کے زخمی ہونے کی اطلاع ہے جن میں سے چار کو ہسپتال منتقل کیا گیا ہے جبکہ باقی افراد کو موقع پر ابتدائی طبی امداد دے کر فارغ کر دیا گیا ہے۔اردونیوز کے مطابق جدہ محکمہ صحت میں ہنگامی شعبے کے سربراہ ڈاکٹر سامر اسرہ نے بتایا ہے کہ جدہ کے تمام ہسپتالوں میں ایمرجنسی کا اعلان کر دیا گیا ہے۔
ان کے مطابق ریلوے سٹیشن میں محکمہ صحت کی آٹھ ٹیمیں طبی امداد کے لیے موجود ہیں۔ علاوہ ازیں ہلال احمر کی بھی ٹیمیں امداد فراہم کر رہی ہیں۔
دوسری طرف جدہ ریلوے سٹیشن میں لگنے والی آگ پر قابو پانے کی کوشش جاری ہے۔ مکہ گورنریٹ نے ٹویٹر پر کہا ہے کہ سٹیشن کی چھت میں آگ لگی ہے۔ محکمہ شہری دفاع کی زمینی و فضائی ٹیمیں آگ بجھانے کی کوشش کر رہی ہیں۔
حرمین ریلوے سٹیشن میں آگ پر قابو پانے کی کارروائی جدہ کے کمشنر شہزادہ مشعل بن ماجد کی نگرانی میں ہو رہی ہے جو وہاں اپنی ٹیم کے ہمراہ موجود ہیں۔
فوری طور پر آتشزدگی کی وجوہات بھی معلوم نہیں ہو سکی ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:  سعودی عرب میں گونگے بہرے بچے قرآن سیکھنے لگے!


العریبیہ ٹی وی کے مطابق یہ آگ مقامی وقت کے مطابق 12:35 پر لگی۔
شاہ سلمان نے سعودی عرب کے مقدس شہروں مکہ اور مدینہ کے درمیان تیز ترین مسافر ٹرین سروس کا افتتاح گذشتہ برس کیا تھا۔ اس ٹرین کی رفتار 300 کلومیٹر فی گھنٹہ ہے۔
حرمین ریلوے کا ٹریک 450 کلومیٹر طویل ہے اور اس کو تعمیر کرنے پر 6.7 ارب یورو لاگت آئی تھی۔ یہ ریلوے لائن مقدس شہروں مکہ اور مدینہ کو آپس میں ملاتی ہے۔
مکے کا ریلوے سٹیشن مسجد الحرام سے چار کلومیٹر کے فاصلے پر واقع ہے۔اس ریلوے سٹیشن میں ایک گھنٹے میں 20 ہزار مسافروں کو سفری سہولیات مہیا کی جاسکتی ہیں۔
یہ ریلوے لائن دو مراحل میں مکمل کی گئی تھی اور اس میں سعودی، فرانسیسی، چینی اور سپین کی کمپبنیوں نے حصہ لیا تھا۔ منصوبے کی تکمیل میں تقریباً چھ سال کا عرصہ لگا تھا۔

یہ بھی پڑھیں:  کرونا وائرس دنیا میں کہاں پر کیا ہور ہا ہے ؟