abid ali

پتہ نہیں کیوں ہمیں خبر دینے کی اتنی جلدی ہوتی ہے کہ زندہ انسانوں کو مار دیتے ہیں

EjazNews

عابد علی گزشتہ کئی دنوں سے ہسپتال داخل ہیں۔ ان کی تشویشناک حالت کو پیش نظر رکھتے ہوئے ان کے گھر والوں نے دعا کی اپیل کی تھی۔ ڈاکٹروںنے بھی ان کی حالت کو تشویشناک قرار دے کر ملنے آنے والوں کو منع کر دیا تھا۔ لیکن اس کا یہ مطلب ہرگز نہیں کہ ان کے زندہ رہنے کی امید ہی ختم ہو گئی ہے۔اُمید پر دنیا قائم ہے۔ سینئر اداکارہ ذہین طاہرہ بھی یوں ہی ہسپتال میں داخل تھیں اور ان کی مرتبہ بھی سب سے پہلے میں نے خبر دی والوں نے زندہ ذہین طاہرہ کو مار دیا تھا۔

معروف اداکار عابد علی جگر کے عارضے میں مبتلا تھے جس کی وجہ سے انہیں ہسپتال داخل کرایا گیا ۔ جب ان کی حالت شدید خطرات سے دو چارہوئی تو ان فیملی کی جانب سے دعاﺅں کی اپیل بھی کی گئی۔ انہیں کراچی کے نجی ہسپتال میں داخل کیا گیا تھا۔
ٹی وی اور فلم انڈسٹری میں اپنا ایک الگ مقام بنانے والے عابد علی 1952ءمیں کوئٹہ میں پیدا ہوئے۔ ان کی تین بیٹیاں ہیں۔ انہوں نے دو شادیاں کی تھیں ۔ ان کی پہلی اہلیہ حمیرا علی اور دوسری رابعہ نورین ہے۔ دونوں بیویاں شوبز سے وابستہ رہی ہیں۔ ویسے تو ان کی زندگی میں بہت سے لازوال کردار ہیں لیکن ان کو پی ٹی وی کی ڈرامہ سیریل وارث نے بلندیوں کے آسمان پر پہنچا دیا۔

یہ بھی پڑھیں:  ماوراحسین قانون دان بن گئی

67سالہ عابد علی کو 1985ءمیں پرائیڈ آف پرفارمنس مل چکا ہے۔ فلمی دنیا میں ان کی ایک بیٹی ایمان علی نے بھی بہت شہرت پائی۔