syed ali gilani

بھارت پوری فوج بھی لے آئے کشمیری حق کے لیے کوشاں رہیں گے :سید علی گیلانی

EjazNews

بزرگ سیاسی رہنما سید علی گیلانی کشمیریوں کے وہ رہنما ہیں جن کی بات پر ہر کشمیری لبیک کہتا ہے۔ وہ ہمیشہ سے کشمیریوں کے حقوق کی جنگ لڑتے آئے ہیں ان کی ساری جوانی کشمیرکی آزادی حاصل کرنے کیلئے گزری ہے۔ بھارت کے جارحانہ اقدام کے بعد سے کشمیر کے تمام رہنما کو پابند سلاسل کر دیا گیا ہے اس میں کوئی امتیاز نہیں رکھا گیا کہ یہ رہنما کبھی اس صوبے کے وزیراعلیٰ رہے ہیں یا پھر سیاسی جدوجہد کرر ہے ہیں ۔ بس وہ کشمیری تھے اس لیے قید میں ڈال دیا گیا۔ گزشتہ دنوں انڈین کانگریس کے راہول گاندھی بھی سری نگر ائیر پورٹ تک پہنچنے جہاں سے انہیں باہر بھی نکلنے نہیں دیا گیا ۔ میڈیا والوں کو مارا پیٹا گیا کہ کوریج نہ کر سکیں۔ اگر سب کچھ ٹھیک ہوتا تو کیا یہ کرنے کی ضرورت تھی۔ کہا جارہا ہے کہ کشمیر میں ایک خوفناک خاموشی ہے ایسی خاموشی جو طوفان سے پہلے کی سی ہوتی ہے۔
اسی خاموشی میں کشمیر رہنما سید علی گیلانی نے ایک خط کے ذریعے سےکشمیریوں کو اور دنیا بھر کے لوگوں کو بتایا ہے کہ کشمیر ی کسی صورت جھکنے والے نہیں ہیں۔سید علی گیلانی کا کہنا تھاکہ کشمیر میں مواصلاتی نظام بند اور ہزاروں نوجوان گرفتار ہیں، کشمیری عوام بہادری سے بھارتی مظالم کے خلاف کھڑے ہیں، بھارتی فوج مارنے کیلئے تیار ہے تو ہم مرنے کیلئے تیار ہیں، مقبوضہ کشمیر سے باہر لوگ کشمیر کے سفیر بنیں اور احتجاج کریں۔

یہ بھی پڑھیں:  بس اسی کی کمی تھی: ڈونلڈ ٹرمپ نے اپنا سوشل میڈیا متعارف کر ادیا

ان کا کہنا تھا کہ بھارت پوری فوج بھی لے آئے کشمیری حق کے لیے کوشاں رہیں گے۔ بھارت کی کوشش کے باوجود مسئلہ کونسل میں اٹھا، بھارت کشمیر نہیں، بلکہ کشمیر کی سرزمین چاہتا ہے۔
سید علی گیلانی کا کہناتھا کہ پاکستان اور مسلم امہ کشمیریوں کی مدد کے لیے آگے آئیں، عمل کا وقت ہے ۔ایسا نہ ہو ا تو آئندہ نسلیں معاف نہیں کریں گی، ہمیں مکمل متحرک ہونا پڑے گا۔
سید علی گیلانی نے کشمیریوں کے نام لکھے گئے اپنے خط میں کہا ہے کہ بھارت کو تاریخ معاف نہیں کرے گی۔ ان کا کہناتھا کہ عالمی میڈیا نے کشمیر کے مسئلے کو جس طرح اجاگر کیا ہے پہلے کبھی ایسا نہیںہوا۔