Dr arif alvi

غالبانہ سوچ کے ذریعے کشمیر کو نگلنے کا ارادہ ہے لیکن یہ کبھی نہیں ہوگا:صدر مملکت

EjazNews

صدر مملکت کا غیر ملکی میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہنا تھا کہ اگر بھارتی حکومت کو ایسا لگتا ہے کہ کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کر کے وہاں لوگوں کی زندگی کو بہتر بنائے گی تو وہ احمقوں کی جنت میں رہتی ہے۔صدر عارف علوی نے کہا کہ بھارت اس وقت آگ سے کھیل رہا ہے اور یہ آگ بلآخر اس کے سیکولر تشخص کو جلا کر راکھ کر دے گی۔جب ان سے سوال کیا گیا کہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے اجلاس کے بعد اعلامیہ جاری نہ ہونا مایوس کن تھا جس پر صدر مملکت نے جواب دیا کہ اس حوالے سے بہت زیادہ بیک ڈور بات چیت ہوئی اور سب سے بڑھ کر یہ کہ کافی عرصے بعد ایک مرتبہ پھر مسئلہ کشمیر بین الاقوامی مسئلہ بن گیا۔اپنے انٹرویو میں ان کا کہنا تھا کہ بھارت نے سلامتی کونسل کی متعدد قراردادوں کو نظر انداز کیا اور پاکستان کے ساتھ مسئلہ کشمیر کو حل کرنے کے لیے بات کرنے سے انکار کیا۔ یہ کب تک جاری رہے گا؟ پاکستان اور بھارت کے درمیان شملہ معاہدے کو کافی وقت گزر چکا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  طالبان مذاکرات اسلام آباد میں

صدر مملکت کا اپنے انٹرویو میں کہنا تھا کہ میرے خیال سے یہاں غالبانہ سوچ کے ذریعے کشمیر کو نگلنے کا ارادہ ہے لیکن یہ کبھی نہیں ہوگا۔پاکستان اس معاملے کو بین الاقوامی سطح پر اٹھانے کا سلسلہ جاری رکھے گا، تاہم مقبوضہ کشمیر سے کرفیو اٹھنے کے بعد ہی وہاں کے عوام اپنے ارادے بتائیں گے۔
صدر مملکت عارف علوی کا کہنا تھا کہ ایسا ممکن ہے کہ بھارت پلوامہ حملے جیسی جھوٹی کارروائی کروائے جسے جواز بنا کر وہ پاکستان پر حملہ کر سکتا ہے۔پاکستان جنگ کا آغاز نہیں چاہتا، تاہم اگر جنگ مسلط کی گئی تو ہم دفاع کا حق رکھتے ہیں۔
صدر مملکت نے ایک ویڈیو بھی شیئر کی ہے جس میں کشمیریوں کو احتجاج کرتے ہوئے دکھایا گیا ہے ۔کہ کس طرح سے کشمیری انڈین غاصبانہ قبضے کیخلاف لڑ رہے ہیں اور اپنی جدوجہد آزادی کی کوششوں میں لگے ہوئے ہیں۔ مقبوضہ کشمیر میں مسلسل کرفیو نافذ ہے اس کے باوجود لوگ کرفیو توڑ کر احتجاج کر رہے ہیں۔ اس سے بڑھ کر اور کیا ہو سکتا ہے جو دنیا دیکھنا چاہتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  اب اپوزیشن کو ایک اور عمران خان دیکھنے کو ملے گا

جبکہ ایک اور شیئرنگ میں ان کا کہنا ہے دنیا کو معلوم ہونا چا ہیے کشمیریوں کی آواز فوجی طاقت سے نہیں دبائی جاسکتی، کشمیری کی خوبصورت وادی اور عوام کو لوٹا جارہا ہے، کشمیریوں کے ہر آنسو اور بہتے خون کے قطرے میں آزادی کا مطالبہ ہے۔