kashmir-14-aug

آزادی کے دن پر قومی رہنما کیا کہہ رہے ہیں

EjazNews

اسلام آباد میں پرچم کشائی کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے صدر پاکستان کا کہنا تھا کہ دنیا دیکھ رہی ہے کہ پاکستانی قوم کشمیری بھائیوں کے ساتھ کھڑے ہیں، ہم اپنے کشمیری بھائیوں کو کبھی تنہا نہیں چھوڑیں گے۔ ہم اپنے کشمیری بھائیوں کے ساتھ ہیں اور ساتھ رہیں گے۔
ان کا کہنا تھا کہ مسئلہ کشمیرعالمی سطح پر تسلیم شدہ تنازعہ ہے۔ ان کاکہنا تھا کہ طے ہوا تھا کہ کوئی بھی ملک کشمیرکی حیثیت کو تبدیل نہیں کرے گا۔
صدر مملکت نے کہا کہ 9لاکھ فوج کے باعث مقبوضہ کشمیر دنیا کا سب سے بڑا ملٹری زون بن چکا ہے۔بھارت کشمیریوں کی فون سروس اور انٹر نیٹ بندش جیسے ہتھکنڈے استعما ل کر رہا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ بھارتی اقدام سے خطے کے امن و سکون کو خطرہ ہے۔ ان کا کہنا تھا بھارت مقبوضہ کشمیر میں فوجی جبر اور تشدد کو بندے کرے۔ بھارت ہماری امن پسندی کو ہماری کمزوری نہ سمجھے۔ بھارت یہ بات نہ بھولے کہ مسئلہ کشمیر کے تین فریق ہیں ۔
وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا ہم مقبوضہ کشمیر میں اپنے بھائیوں کی حالت زار پر افسردہ ہیں۔ کشمیری عوام کی سیاسی، اخلاقی اور ساری حمایت جاری رکھیں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ بھارت کے حالیہ اقدام سے ہمارے آبائو اجداد کے دو قومی نظریے کو مزید تقویت ملی ہے۔
مسلم لیگ ن کے صدر اور اپوزیشن لیڈر میا ں شہباز شریف کا کہنا ہے کہ گجرات کے قاتل نریندر مودی نے کشمیر پر ظلم و ستم ڈھائے، مودی نے 370اور35ا ے ختم ک کے کشمیر پر قبضہ کرنے کی کوشش کی۔ 1965ء میں بھارت کو منہ توڑ جواب دے چکے ہیں جب پوری قوم فوج بن چکی تھی۔اس کے بعد بھارت نے پھر حملہ کرنے کی گندی کوشش کی۔
میاں شہباز شریف کا کہنا تھا کہ 72سال گزر گئے لاکھو ں شہیدوں کا حساب کتاب نہیں ہوا، وہ لاکھوں شہید پوچھیں گے کہ اس عظیم پاکستان کے لیے قربانیاں دیں تم نے کیا کیا اس پاکستان کے ساتھ ۔ان کا مزید کہنا تھا 1998ء میں 28مئی کو ایٹمی دھماکے ہوئے، نواز شریف سے کہا گیا کہ ایٹمی دھماکے نہ کریں ،5ارب ڈالر کی پیشکش کی گئی، لیکن نواز شریف نے 5دھماکے کر کے دشمن کے دانت کھٹ کر دئیے۔
اپوزیشن لیڈر کا کہنا تھا کہ مودی وہ دن د ورنہیں جب ہم تم سے ایک ایک دن کا حساب لیں گے۔ کشمیر کیوادی خون سے سرخ ہو چکی ہے۔ اور کتنی قربانی مانگتے ہو، آج ہمیں ٹرمپ کی طرف نہیں دیکھنا اللہ کی طرف دیکھا ہے اللہ کی مدد آئے گی اور ضرورآئے گی۔ شرط ی ہ ہے کہ ہمیں کشمیریوں کے ساتھ کھڑے رہنا ہوگا۔
وزیراعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان کا کہنا تھا کہ پاکستان یوم آزادی کشمیریو ں سے یکجہتی کے طور پر منا رہا ہے، کشمیریوں کی سیاستی، سفارتی اخلاقی حمایت جاری رکھیں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ کشمیری عوام کو حق خود ارادیت ملنے تک تقسیم ہند کا ایجنڈا مکمل نہیں ہو سکتا۔کشمیر تقسیم ہند کا نامکمل ایجنڈا ہے۔ان کا کہنا تھا وہ دن دور نہیں جب کشمیری پورے ولولے سے یوم آزادی منائیں گے۔
واضح رہے: ملک بھر میں یوم آزادی کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کے طور پر منایا جارہا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  حمزہ شہباز آج گرفتار ہوںگے یا پھر ضمانت میں توسیع؟