pak armi

راہ حق کے شہیدو ! تمہیں سلام ہے

EjazNews

شمالی وزیرستان میں گشت پر مامور فوجی جوانوں پر افغانستان سے دہشگروں کا حملہ ،بلوچستان میں آپریشن کرنیوالی ایف سی کی ٹیم پر فائرنگ، کیپٹن سمیت 10افراد شہید، یہ تھی وہ خبر جواخبارات میں شائع ہوئی۔ لیکن یہ جوان اس سے بڑھ کر عزت کے حقدارہیں ،یہ وہ عظیم لوگ ہیں جن کی بدولت شہروں اور دیہات میں بسنے والے کروڑوں لوگ امن و چین کی زندگی گزار رہے ہیں۔
فوجی جوانوں کی حفاظت کیلئے حکومت کو مزید اقداما ت کرنے کی ضرورت ہے۔ ان کیلئے بلٹ پروف جیکٹس اور ایسی بہت سی چیزیں جو ان کی حفاظت کر سکیں بہت ضروری ہیں کیونکہ ہم اس وقت ایسے دور سے گزر رہے ہیں جس وقت دوست اور دشمن کی پہچان کرنا مشکل ہو گیا ہے۔ ہمارا ہمسایہ جو پاکستان کو مختلف حربوں سے کمزور کرنے کی کوشش کرتا رہتا ہے وہ اس وقت افغانستان میں پوری طرح پنجے گاڑے بیٹھا ہوا ہے۔ ذرائع کے مطابق وہاں پر دہشت گردوں کو باقاعدہ ٹریننگ بھی دی جارہی ہے کہ کس طرح پاکستان میں حملے کرنے ہیں۔ان دہشت گردوں کو پاکستان کے اندر گھسنے سے پہلے سرحدوں کی حدود میں اپنی جانیاں کی قربانیاں پیش کرنے والے پاکستان کے ان عظیم سپوتوں کا سامنا کرناپڑتا ہے، ورنہ جس طرح دہشت گردی کی ٹریننگ افغانستان کے خفیہ علاقوں میں دی جارہی ہیں اگر ایسے بدبخت پاکستان میں گھس جائیں تو شاید ہم پاکستانیوں کے پرخچے اڑانے میں وہ سکینڈز نہ لگائیں۔
اب وقت ہے کہ دہشت گردی میں معاونت کرنے والوں اور دہشت گردوں کی سرپرستی کرنے والوں دونوں کو منہ توڑ جوا ب دیا جائے اور ایسے جواب دئیے جائیں کہ ان کی آنے والی نسلیں پاکستان کے ان عظیم سپوتوں کی طرف نہ دیکھ سکیں۔
پاکستان آرمی مسلسل حالت جنگ میں ہے اور آرمی صبرو تحمل کا مظاہرہ بھی بھرپور کر رہی ہے۔ ایک طرف اندرونی سطح پر کچھ لوگ سر اٹھانے کی کوشش کر رہے ہیں اور بیرونی سطح پر تو آرمی 2000ء سے ایک قسم کی حالت جنگ میں ہے ،جس میں ہمارے شہیدوں کی تعداد ہزاروں میں ہے۔ گزشتہ روز ہونے والی کارروائی صرف پاکستانی فوج کے جوانوں پر نہیں ہوئی بلکہ یہ پاکستان اور پاکستان کی سالمیت پر حملہ کیا گیا ہے کیونکہ پاکستان اور پاکستان کی سالمیت کی ایک نشانی پاکستان آرمی ہے۔ یہ جتنی مضبوط ہو گی ،اس کے وسائل جتنے بڑھیں گے، اس کے پاس جتنا جدید ترین ہتھیار ہوگا ، یقین کیجئے پاکستان اتنا زیادہ محفوظ ہوگا۔ اس لیے ہمیں دہشت گردوں کی سرکوبی کے ساتھ ساتھ اپنے جوانوں کی حفاظت کیلئے بھی اقدامات اٹھانے چاہئیں۔

یہ بھی پڑھیں:  آئی سی سی کی نئی ینکنگ جاری، پاکستانی ٹیم اپنی تمام پوزیشنوں سے نیچے آگئی