dowland trap

حافظ سعید کی گرفتاری میرے 2سالہ دباﺅ کا نتیجہ ہے: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ

EjazNews

گزشتہ روز انسداد دہشت گرد ڈیپارٹمنٹ نے کالعدم جماعت الدعوة کے سربراہ پروفیسر حافظ محمد سعید کو مالی معاونت کے کیس میںگرفتار کیا تھا۔ انسداد دہشت گردی عدالت نے حافط سعید کو 7روزہ جوڈیشل ریمانڈ پر سینٹرل جیل منتقل کرنے کا حکم دے دیا تھا ۔اسی دوران امریکی صدر بھی ایکشن میں آئے اور کہتے ہیں حافظ سعید کی گرفتاری میری پاکستانی حکام پر اپنے دو سالہ دباﺅ کا نتیجہ ہے جبکہ امریکہ کی قائمقام نائب وزیر خارجہ ایلس ویلز نے حافظ سعید کے خلاف مکمل عدالتی کارروائی یقینی بنانے کا مطالبہ کیا ہے۔
بھارتی حکومت کے ذرائع نے حافظ سعید کی گرفتاری کو دکھاوا قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ ہم حقیقی ایکشن چاہتے ہیں ان کے خلاف عدالتی کارروائی چلنی اور سزا سنائی جانی چاہئے۔
ترجمان وزیر اعلیٰ نے کہا کہ نیشنل ایکشن پلات کے تحت داخلی معاملات جن میں غیر قانونی طورپر چندہ اکٹھا کرنے اورادارے چلانے پر حافظ سعید کو گرفتار کیا گیا ہے۔ ان کا کہناتھا ملک میں نیشنل ایکشن پلان کے تحت کارروائیاں ہو رہی ہیں۔ اور حکومت اس حوالے سے ضروری اقدامات اٹھاتی ہے۔
امریکی صدر ٹرمپ نے اپنے ایک ٹویٹ میں بھی یہ کہا ہے کہ 10سال کی تلاش کے بعد ممبئی دہشتگرد حملوں کے نام نہاد ماسٹر مائند کو پاکستان سے گرفتار کر لیا گیا ہے۔ گزشتہ 2برسوں سے پاکستان پر اس کی گرفتاری کیلئے شدید دباﺅ ڈالا جارہا تھا۔

یہ بھی پڑھیں:  عالمی شہرت یافتہ امریکی سائیکلسٹ کی مبینہ خودکشی