arshad malik

اب اونٹ کس کروٹ بیٹھے گا

EjazNews

وکیل کی جانب سے دائر کی گئی درخواست پر سپریم کورٹ نے جج ارشد ملک کی مبینہ ویڈیو سے متعلق درخواست سماعت کیلئے منظور کرلی ہے۔ 16جولائی کو تین رکنی بینچ کیس کی سماعت کرے گا۔
جبکہ مسلم لیگ ن کے صدر میاں شہباز شریف نے اپنے بیان میں کہا کہ احتساب عدالت کے جج کو ہٹانے کے بعد نواز شریف کے خلاف فیصلہ کالعدم ہو چکا ہے اور جج کے منصب سے ہٹنے کے بعد نواز شریف کو فی الفور رہا کیا جائے۔
وزیر قانون اور وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے احتساب کی پریس کانفرنس کے بعد وزیر اعظم کی صاحبزادی مریم نواز نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ رب العالمین کا بےحساب شکر ہے۔ نواز شریف اور میں نے صرف اسی پر توکل اور بھروسہ کیا۔ مجھے اللہ پر یقین تھا کہ وہ نواز شریف کی بے گناہی ضرور ثابت کرے گا اور ان کو سرخرو کرے گا۔ ساری زمینی طاقتوں کی سازشوں کے باوجود اللہ نے نواز شریف کی سچائی دنیا کو دکھا دی۔ اس پر وہی قادر ہے!

یہ بھی پڑھیں:  سری لنکا کو آسٹریلیا سے جیتنے کیلئے 335رنز درکار ہوں گے

جج صاحب ہر کسی سے ہنسی خوشی ملتے رہے، کسی کو اپنی سرکاری گاڑی بھیج کر اپنے ذاتی گھر بلاتے رہے، اور کسی سے خود ان کے دفتروں اور گھروں میں جا جا کر کہتے رہے کہ مجھے دباؤ میں لاؤ اور بلیک میل کرو ۔
پتہ نہیں کسی کے خلاف سازش اور ظلم کرنے والے یہ کیوں بھول جاتے ہیں کہ اللہ دیکھ رہا ہے اور سب سے بڑی اور کامیاب تدبیر اللہ ہی کی ہے۔ پوری ریاست ایک شخص سے انتقام لینے پر تلی ہوئی تھی مگر کس کو عزت دینا ہے اور کس کو ذلت، یہ فیصلے اللہ کے ہیں۔
سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے اپنے ایک ٹی وی انٹرویو میں کہا ہے کہ حکومت فیل ہو چکی ہے ، مڈ ٹرم انتخابات کے علاوہ کوئی حل نہیں۔
جبکہ وزیراعظم کی معاون خصوصی اطلاعات کا کہنا تھا کہ جج ارشد ملک نے محض بیان حلفی نہیں، آل شریف کیخلاف چارج شیٹ پیش کی ہے۔
جج ارشد ملک کی جانب سے حلفیہ بیان میں یہ بات سامنے آرہی ہے جس میں وہ کہہ رہے ہیں کہ مجھے 16سال پہلے کی ویڈیو دکھا کر بلیک میل کیاگیا ۔
اب یہ کیس عدالت میں شروع ہونے والا ہے اور دیکھتے ہیں اونٹ کس کروٹ بیٹھتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  آرمی چیف سے اسلامی فوجی اتحاد کے سربراہ و سابق آرمی چیف جنرل راحیل شریف کی ملاقات