sridavi

کیا واقعی سری دیوی کو قتل کیا گیا تھا؟ انڈیا بھر میں ایک نئی بحث چھڑ گئی

EjazNews

سری دیوی برصغیر پاک و ہند کی مشہور فنکارہ تھیں۔ سائوتھ فلم انڈسٹری سے اپنے فنی کیرئیر کا آغاز کرنے والی سری دیوی نے زندگی میں بہت سے عروج وزوال دیکھے تھے۔ فلم پروڈیوسر اور بزنس مین بونی کپور سے ان کی شادی کامیاب رہی ۔ سری دیوی سائوتھ کی ان اداکارائوں میں سے ایک تھیں جنہوں نے ہندی سینما پر بھی سپر سٹار کا درجہ حاصل کیا۔
سری دیو ی کی دبئی کے ایک ہوٹل میں کچھ برس پہلے موت واقع ہو گئی تھی۔ تین دن تک ان کی لاش ورثاء کے حوالے نہیں کی گئی تھی تاکہ پوسٹ مارٹم کر کے پتہ چلایا جاسکے کہ ان کی موت کس وجہ سے ہوئی تھی۔ دبئی حکام کی جانب سے جاری کر دہ رپورٹ کے مطابق سری دیوی کی موت زیادہ شراب نوشی کے بعد باتھ ٹب میں ڈوبنے کے باعث ہوئی۔

سری دیوی کی ان کے شوہر بونی کپور کے ساتھ ایک تصویر

سری دیوی کا خاندان ، بونی کپور اور بچے رو دھو کر چپ ہو گئے تھے کہ گزشتہ دنوں انڈین ریاست کیرالہ کے ڈی جی پی نے رشی راج سنگھ نے کیرالہ کے ایک اخبار میں اپنی تحریر لکھی جس میں ان کا کہنا تھا کہ سری دیوی کی موت اتفاقیہ نہیں تھی۔ جس پر مرحومہ کے شوہر بونی کپور کا کہنا تھا کہ میں ایسی تحریروں کا جواب نہیں دینا چاہتے جو لوگ اپنے تصورات بنا بیٹھے ہیں اور اس طرح شہرت حاصل کرنے کی کوشش کرتے ہیں۔
سنگھ نے اپنے کالم میں لکھا ہے کہ ان کو فرانزک ایکسپر ٹ ڈاکٹر امیداتھن جو ان کے دوست ہیں نے بتایا ہے کہ سری دیوی کی موت کوئی حادثہ نہیں بالکل قتل ہے۔ فرانزک ایکسپرٹ کا کہنا تھا کہ کس طرح کوئی ایک فٹ گہرے پانی میں ڈوب کر مر سکتا ہے چاہے اس نے جتنی بھی شراب پی ہو۔ ان کا کہنا تھا کہ جب تک کسی نے ان کے پائوں پکڑ کر نہیں رکھے اور سر کو پانی کے اندر دبا کر نہیں رکھا یہ ممکن نہیں ہے۔
سری دیوی گزشتہ سال فروری میں دبئی میں ایک شادی کی تقریب میں شرکت کرنے کیلئے گئی تھیں لیکن وہی پر ان کی موت کی خبر آئی۔ اب بہت سے نئے سوالا ت نے جنم لیا ہے کہ اگر سپرسٹار کو قتل کیا گیا تھا تو کیوں ، اگر نہیں تو پھر اتنے اہم معاملہ ڈی آئی جی لیول کے شخص کو کچھ لکھنا چاہیے۔

یہ بھی پڑھیں:  آئمہ بیگ نے منگنی کر لی