zara

کیا زارا وسیم بالی ووڈ چھوڑ کر بھی چھوڑ پائیں گی؟

EjazNews

زارا وسیم کا تعلق مقبوضہ کشمیر سے ہے ۔13سال کی عمر میں انہوں نے بالی ووڈ میں قدم رکھا اور خوش نصیبی سے پہلی فلم ہی عامر خان کی مل گئی۔ اس فلم میں انہوں نے عامر خان کی بیٹی کا رول کیا۔ فلم نے دنیا بھر میں بزنس کیا اور ساتھ ہی فلم کے کرداروں کی مقبولیت میں بھی اضافہ ہوا۔ اس کے بعد زارا نے دوسری فلم کی یہ فلم بھی عامر خان کی ہی تھی ،سیکرٹ سپر سٹار ۔ اس فلم میں زارا وسیم کے کام کو بہت سراہا گیا۔ فی الوقت وہ بالی وڈ میں تیسری فلم مکمل کروا چکی ہیں جس میں وہ فرحان اختر اور پریانکا چوپڑہ کی بیٹی کا کردار ادا کر چکی ہیں۔ جب انہوں نے بالی ووڈ کو چھوڑنے کافیصلہ کیا اور ایک ٹویٹ کے ذریعےسب کو بتایا تو یہ ٹویٹ جنگل کی آگ کی طرح پھیلنا شروع ہوا اور یہ برصغیر سے باہر کی دنیا میں بھی زیر بحث آنے لگا۔ اپنے ٹویٹ میں ان کا کہنا تھا کہ بالی ووڈ سے ان کے مذہبی عقائد میں مسائل پیدا ہو رہے ہیں اس لئے وہ اب بالی ووڈ کو چھوڑ رہی ہیں، اور وہ مزید کام جاری نہیں رکھنا چاہتی۔ان کا کہنا تھا کہ پانچ سال پہلے میں نے چانس لیا اور ایک فیصلہ کیا اور ایک فیصلہ اب میں نے کیا اور میرے خیال میں میرا آج کا فیصلہ بہتر ہو گا ، انشاء اللہ۔
ان کے اس ٹویٹ کے بعد تو جیسے انڈین میڈیا میں آگ سے لگ گئی ہو۔ ہر طرف سے ان پر تیر برسنے شروع ہو گئے۔ جس کے منہ میں جیسی زبان تھی اس نے استعمال کی اور جس کی انگلیاں جیسا ٹائپ کروانا یا کرنا چاہتی تھیں اس نے اپنے دماغ کی عکاسی کی۔
ماضی کی مشہور اداکارہ نغمہ اور کانگریس پارٹی کی رکن اپنے ٹویٹ میں کہتی ہیں کہ وہ ان کے اس فیصلے پر ان کو مبارکباد دیتی ہیں اور ان کے ساتھ ہیں۔
صبا نقوی کہتی ہیں یہ زارا کا اپنا فیصلہ ہے کوئی اور جج بننے کی کوشش نہ کرے ۔ بہت سے لوگ ہوتے ہیں اپنی رو ح کے سکون کیلئے فیصلے کرتے ہیں۔
اب انڈین میڈیا میں جو سب سے زیادہ گفتگو میں آرہی ہیں وہ ہیں زارا وسیم کہ آخری انہوں نے بالی ووڈ کو کیوں چھوڑا اور یہ بحث تھمنے کا نام ہی نہیں لے رہی۔
زارا نے کسی پر تنقید نہیں کی اور کسی کو شرمندہ بھی نہیں کیا ، اس نے نہ کسی کو کچھ کہا ، اپنا فیصلہ سنایا ہے ۔ جس کا دیکھا جائے تو زارا کو پور ا اختیار حاصل ہے۔زارا نے بالی ووڈ کی کسی دوسری ایکٹریس کو ایسا کرنے کی طرف راغب نہیں کیا نہ کسی کو میڈیا انڈسٹری چھوڑنے کا کہا ہے یہ ان کا ذاتی فعل ہے جس کے پیمانے میں تمام لوگوں کو تولنا نا انصافی ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  ہالی وڈ سیلبرٹیز کی فٹنس کا راز