khana kaba

فرشتوں اور نبیوں کا حج

EjazNews

حج کرنا صرف انسانوں اور جنوں کے لئے مخصوص نہیں ہے بلکہ اس کے ادا کرنے والے فرشتے بھی ہیں ۔ فرشتوں کا اصلی حج عرش الٰہی کا ہوتا ہے اور وہ بیت معمور کا بھی طواف کرتے ہیں۔ حدیث میں ہے۔ جب اللہ تعالیٰ نے حضرت آدم علیہ السلام کو جنت سے زمین پر اتارا تو ارشاد فرمایا کہ تمہارے ساتھ ایک گھر بھی اتاروں گا کہ جس کا اس طرح طواف کیا جائے گا جس طرح میرے عرش کا طواف کیا جاتا ہے۔ (طبرانی)
ایک روایت میں ہے جب حضرت آدم علیہ السلام بیت اللہ شریف پہنچے تو فرشتوں نے ان کا استقبال کر کے کہا: ہم نے آپ سے دو ہزار برس پہلے اس گھر کا حج کیا ہے۔ (ترغیب)۔
نبیوں کا حج
چونکہ انبیاءعلیہم السلام اللہ تعالیٰ کے کامل و خاص بندے ہوتے ہیں ۔ عبادت کے راستوں سے خوب واقف ہوتے ہیں۔ بیت اللہ شریف عبادت الٰہی کا مرکز ہے اس لئے تقریباً تمام نبیوں نے یہاں آکر اللہ تعالیٰ کے گھر کی زیارت کی ہے۔ حضرت ابن اسحاق بیہقی ؒ حضرت عروہ ؓ سے روایت کرتے ہیں کہ آپ نے فرمایا ما من نبی الا وقد حج البیت ”سب نبیوں نے بیت اللہ شریف کا حج کیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  فضائل طواف