home remandes

چند آزمودہ گھریلو ٹوٹکے

EjazNews

ویسے تو آج کل سب کو بہت گھریلو ٹوٹکا علم ہوتا ہے لیکن کچھ خواتین آج بھی سیکھنے کے عمل کو نہیں چھوڑنا چاہتی اور وہ اپنے گھر بار کو دوسرو ں سے بہتر چلانے کی جستجو میں رہتی ہیں بس انہی خواتین کے لیے میں نے یہ گھریلو ٹوٹکے اکٹھے کیے ہیں۔ یہ گھریلو ٹوکے آپ کے لیے بہت مفید اور کارآمد ثابت ہو ں گے۔
٭ بند گوبھی جب بھی پکائیں، تو دھو کر کاٹیں، کیوں کہ کاٹ کر دھونے سے تمام وٹامنز ضائع ہو جاتے ہیں۔
٭ بینگن کاٹ کر کچھ دیر کے لیے رکھ دیں، تو ان کی رنگت سیاہ پڑجاتی ہے۔ اگر انھیں کاٹنے کے بعد نمک ملے پانی میں بھگودیا جائے، تو رنگت تبدیل نہیں ہوگی۔
٭ مٹر، ابلتے ہوئے پانی میںاس کے چند چھلکے ڈالنے سے رنگت اور مٹھاس میں اضافہ ہوجاتا ہے۔
٭ تھوڑے سے پانی میں سرکہ ملاکر سبزی پر چھڑک دیا جائے توسبزی ایک ہفتے تک تازہ رہے گی۔
٭ ہاتھوں سے لہسن، دھنیے، پیاز اور مرچوں کی بو دور کرنے کے لیے ٹوتھ پیسٹ ہاتھ پر مل کر دھولیں۔
٭ تھکے ہوئے پیروں کو آرام دینے کے لیے نیم گرم پانی میںلیموںکے چند قطرے شامل کرکے اس میں پاؤں ڈبو دیں۔
٭ اگر ہچکی آرہی ہو، تو لونگ کھالیں یا پھر ایک گلاس پانی پی لیں۔
٭ گلدان کے پانی میں میں اگر صابن کے کچھ ٹکڑے ڈال دئیے جائیں تو پھول دیر تک ترو تازہ رہتے ہیں۔
٭ اگر لیموں لمبے عرصے تک محفوظ رکھنے ہوں، تو ہر لیموں پر موم کا ایک قطرہ ٹپکاکے فریز کردیں۔
٭اکثر آلو میٹھے ہونے کی وجہ سے سالن کا ذائقہ خراب ہو جاتا ہے، اس کا آسان حل یہ ہے کہ میٹھے آلو کاٹ کر پکانے سے قبل لہسن، نمک اور سرکہ لگا کر 45منٹ کےلیے رکھ دیں ۔پکنے کے بعد ذائقہ باکل ٹھیک ہوگا۔
٭ساگ پکانے سے قبل اگر اسے کھولتے پانی میں ابال لیا جائے، تو لذت بڑھ جاتی ہے۔
٭ تندوری روٹیوں کو تازہ کرنے کے لیے ان پر پانی لگائیں اور گرم توے پر بالکل ہلکی آنچ پر پتیلے سے ڈھک کر رکھ دیں۔ دس منٹ بعد روٹیاں تازہ ہوجائیں گی۔
٭سنک کی نالی بند ہوجائے، تو گرم پانی میں کپڑے دھونے کا سوڈا شامل کر کے سنک میں ڈال دیں۔
٭ پھٹکری باریک پیس کر کچن کے کیبنٹس میں رکھیں، تو کیڑے پیدا نہیں ہوتے۔
٭ سرکہ ملے پانی میں سفید ململ کا کپڑا نچوڑ کر گوشت پر پھیلا دینے سے مکھیاں گوشت کے قریب نہیں آتیں۔
٭ صابن کے چند ٹکڑے، سرسوں کے تیل میں گرم کرنے کے بعد لکڑی کے دروازوں اور چارپائیوں کے جوڑوں پر ڈالنے سے چرچراہٹ ختم ہوجاتی ہے۔
٭ الماری، فریج، صندوق کھسکانے کے لیے اس کے اطراف تھوڑا سا ٹالکم پائوڈر فرش پر چھڑک دیں۔
٭ مچھروں سے محفوظ رہنے کے لیے ایک کپ میں تھوڑا سا پانی لیں اور اس میں کافور کے چند ٹکڑے ڈال کر اپنے سرہانے رکھ کر آرام سے سوجائیں۔
٭اگر سرکہ اور پانی ہم وزن ملاکر اس میں کاٹن بھگو کر سفید فرنیچر صاف کیا جائے، تو داغ دھبے دُور ہوجاتے ہیں۔
٭ کسی بیگ کی زِپ (ZIP) درمیان میں پھنس جائے، تو اس پر موم بتی رگڑیں، زپ ٹھیک ہوکر رواں ہوجائے گی۔
٭ شدید کھانسی، خاص طور پر رات سوتے وقت اورصُبح اٹھنے کے بعد ہو، تو رات سوتے وقت ایک یا دو چٹکی اجوائن منہ میں رکھ کر سوجائیں، پانی بالکل نہ پئیں، اس کا رس یا لعاب باہر نکالیں۔ تین چار دن کے استعمال سے کھانسی سے نجات مل جائے۔
٭دست وپیچش میں صُبح ناشتے کی جگہ ایک کیلے پر اسپغول چھڑک کر یا تقریباً دو پائو دہی میں ملاکر کھالیں۔ دونوں صورتوں میں اوپر سے پانی نہ پئیں اور نہ ہی دن بھر کھانا کھائیں۔ اگر بھوک تنگ کرے، تو ایک یا دو اچھی کوالٹی کے کینو یا کیلے کھالیں، رات کو ہلکا پھلکا کھانا کھائیں۔ دو تین دن میں افاقہ ہوجائے گا۔
٭ پھٹی ایڑیوں سے نجات کے لیے کینو کے سوکھے ہوئے ایک پائو چھلکوں کو اچھی طرح گرائنڈ کر کے سفوف بنالیں،پھر تقریباً آدھا پائو زیتون یا ناریل کا تیل ملاکر پیسٹ بنا کے کسی ڈبیا میںرکھ لیں۔ رات اور صُبح کو پائوں دھو کرخشک کریں اوریہ پیسٹ لگاکرموزے پہن لیں، تاکہ پاؤںمٹّی سے محفوظ رہیں۔ ہفتہ بھر استعمال سے ایڑیاں ٹھیک ہوجائیں گی۔
٭ آٹے اور چینی کو سُرخ چیونٹیوں سے محفوظ رکھنے کے لیے جار میں چند لونگ رکھ دیں۔
٭ مٹّی کی ہانڈی میں اگر سب سے پہلے گُڑ کے چاول پکائے جائیں، تو اس میں نہ صرف لائنیں نہیں پڑیں گی، بلکہ پائیداری کی مدت بھی بڑھ جائے گی۔
٭ پائے صاف کرنے کے لیے ایک کھلے منہ والی دیگچی میں اتنا پانی ڈالیں کہ دیگچی بھر جائے۔ پانی کو اچھی طرح سے اُبال کر چولھے سے اُتارلیں اور پھر اس میں پائے ڈال دیں۔ تقریباً ایک گھنٹے بعد دیگچی سے پائے نکال کر چھری کی مدد سے صاف کرلیں۔
٭ پھلوں پر اگر لیموں کا رس چھڑک دیا جائے، تو وہ دیرتک تازہ رہتے ہیں۔
٭ چائے کے داغ پر اسپرٹ لگائیں اور کچھ دیر بعد نیم گرم پانی اورسرف سے دھولیں۔

یہ بھی پڑھیں:  گھریلو ٹوٹکے