شنگھائی تعاون تنظیم کی 19ویں میٹنگ ،دنیا میں بہت کچھ بدل رہا ہے

EjazNews

کرغزستان میں ایس سی او سمٹ میں 8 رکن ممالک نے شرکت کی ۔پاکستان سمیت روس، چین، بھارت، کرغزستان، تاجکستان، قازقستان اور ازبکستان کے سربراہان شریک ہوئے۔سمٹ سے قبل وزیراعظم عمران خان اور چین کے صدر شی جن پنگ کے درمیان وفود کی سطح پر ملاقات ہوئی جس میں دوطرفہ تعلقات اور باہمی دلچسپی کے امور پر گفتگو کی گئی۔

کرغستان کے صدر سے ملاقات کرتے ہوئے

سمٹ کے شرکاء کے اعزاز میں کرغزستان کے صدر سوروونیے شریپوویچ نےظہرانہ دیا ،جس کے بعد وزیراعظم عمران خان روسی صدر ولادی میر پیوٹن کی ملاقات بھی ہوئی۔
اس کے بعد وزیراعظم عمران خان نے اس خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان ہر قسم کی دہشت گردی کی مذمت کرتا ہے،پاکستان کی خارجہ پالیسی امن پسند ہے۔پاکستان دہشت گردی کے خاتمے کے لیے تعاون کرنے کیلئے تیار ہے۔ایشیاء کو ایک جیسے مسائل کا سامنا ہے۔

چائینز صدر کے ساتھ

غربت،جہالت اور سیاست جیسے معاملات کا۔ ملکوں کے درمیان ہم آہنگی پیدا کرنے کے لیے ایس سی او کو عملی اقدامات کرنے ہوں گے اور وائٹ کالر کرائم کے خاتمے کے لیے شنگھائی تعاون تنظیم کے رکن ممالک کو اقدامات کرنے چاہئیں۔پاکستان میں باصلاحیت افراد کی کمی نہیں ہے۔
سمٹ میں روسی صدر کے ساتھ وزیراعظم پاکستان کی ملاقاتیں اور خوش گپیوں سے یہ اندازہ لگانا مشکل نہیں ہو رہا ہے کہ پاکستان کی پالیسیا ں بدل رہی ہیں۔ اور روس کی پالیسیاں بھی بدل رہی ہیں ،بہت سے دوست ایک دوستیاں بدل رہے ہیں۔

بیلا روس سے وفد کی سطح پر ملاقات کرتے ہوئے
یہ بھی پڑھیں:  مشال قتل کا فیصلہ آ گیا