buget

بجٹ کے اہم خدوخال پر ایک نظر

EjazNews

ترقیاتی بجٹ میں بجلی ،پانی ،تعلیم اور سی پیک کے منصوبے شامل ہیں۔بجلی اور گیس کیلئے 40ارب روپے کی سبسڈی ملے گی۔مہمند ڈیم کیلئے15اور دیامیر بھاشا ڈیم کیلئے 20ارب روپے مختص۔
ایک ہزار سی سی تک کی گاڑیوں میں ٹیکس پر 2.5فیصد اضافہ،2ہزار سی سی تک کی گاڑیوں میں ٹیکس میں 5فیصد اضافہ
بجٹ میں کم سے کم تنخواہ 17500روپے کرنے کا اعلان
وزرا کا رضاکارانہ طور پرتنخواہوں میں 10فیصد کمی کا تاریخی فیصلہ
17سے 20گریڈ تک کے ملازمین کی تنخواہوں میں 5فیصد اضافہ
1سے 16گریڈ تک کے ملازمین کی تنخواہوں میں 10فیصد اضافہ
21سے 22گریڈ تک کے ملازمین کی تنخواہو ں میں اضافہ نہ کرنے اعلان
پنشن کیلئے 421ارب روپے رکھے گئے ہیں۔
ریٹائرڈ ملازمین کی تنخواہوں میں 10فیصد اضافہ ۔
کامیاب جوان پروگرام کیلئے 100ارب روپے کے قرضے دئیے جائیں گے۔
مالی خسارہ جی ڈی پی کا 7.2فیصد ہوگا۔ ایف بی آر کا ٹیکس ہدف 5ہزار 555ارب روپے ہوگا۔
10لاکھ مستحق افراد کو صحت مند خوراک فراہم کرنے کیلئے ایک نئی راشن کارڈ سکیم شروع کی جارہی ہے۔
بجلی کے صارفین میں 75فیصد ماہانہ 3سو یونٹ سے کم استعمال کر رہے ہیں۔ حکومت انہیں خصوصی تحفظ فراہم کرے گی، اس مقصد کیلئے 2سو ارب روپے مختص کیے گئے ہیں۔
80ہزار مستحق افراد کو ہر مہینے بلا سود قرضے ملیں گے۔
معذور افراد کو وہیل چیئر اورسننے کیلئے آلات فراہم کیے جائیں گے۔
پانی کے وسائل کیلئے 218ارب روپے خرچ کیے جائیں گے۔
موبائل فون کے لائسنس سے ایک ارب روپے کی آمدن متوقع ہے۔
کارپوریٹ ٹیکس کی شرح 29فیصد برقرار۔
غیر منقولہ جائیداد کی مارکیٹ ویلیو کو 85فیصد تک لایا جارہا ہے۔
نائن فائلر کیلئے جائیداد کی خریداری پر پابندی ختم
دفاعی بجٹ میں اضافہ نہیں کیا جارہا ، گزشتہ سال کی طرح 1150ارب روپے ہے۔
نان فائلر 50لاکھ روپے سے زائد کی جائیداد خرید سکیں گے۔

یہ بھی پڑھیں:  روزہ 14اپریل کو ہوگا:وزارت سائنس۔ رویت ہلال کمیٹی کا اجلاس ابھی ہونا ہے