مفتی شہاب الدین پوپلزئی عید کل ہوگی، وزیر سائنس آج چاند نہیں دیکھا جاسکتا

EjazNews

مفتی شہاب الدین پوپلزئی کے تحت عید الفطر کل ہوگی ۔ ویسے تو ہر سال مفتی شہاب الدین پوپلزئی کو حکومتی رویت ہلال کمیٹی سے ایک دن پہلے چاند نظر آجاتا ہے۔چاہے یہ چاند عید کا ہو یا رمضان کے آغاز کا۔ اس دفعہ ان کا کہنا ہے کہ انہیں 23شہادتیں پشاور سے بھی موصول ہوئی ہیں ۔جبکہ دوسری جانب ہماری وفاقی وزیر سائنس و ٹیکنالوجی سائنسی بنیادوں پر دعویٰ کر رہے ہیں کہ تین بجکر 2 منٹ پر چاند کی پیدائش ہوگئی ہے، آج چاند نہیں دیکھا جاسکتا کیوں کہ سورج کےغروب اور چاند کا طلوع ایک وقت ہے، کراچی اور گوادر کے ساحلی پٹی میں کل چاند بغیر کسی دوربین کے صرف آنکھ سے بھی دیکھا جاسکے گا۔اب وفاقی وزیر کا کہنا ہے کہ منگل کو رویت ہلال کمیٹی کا اجلاس ہوگا، منگل کو آخری روزہ اور بدھ کو عید ہے۔جبکہ محکمہ موسمیات نے بھی کل بروز منگل شوال کا چاند نظر آنے کا قوی امکان ظاہر کیا ہے۔محکمہ موسمیات کے مطابق ملک کے بیشتر حصوں میں کل مطلع صاف اور کہیں جزوی ابر آلود رہنے کا امکان ہے تاہم ملک کے کئی حصوں میں چاند نظر آنے کے قوی امکانات ہیں۔
وزیر سائنس کا کہنا ہے کہ ریاست میں خوشیوں کے تہوار تقسیم کا باعث نہیں ہونے چاہیے، سائنسی بنیادوں پر مسائل کو دیکھنے کی ضرورت ہے، مسلمانوں نے علم سے سیکھنا ہے علم سے ہی آگے بڑھنا ہے۔ علم کے استعمال کا حکم اللہ اور اس کے رسول نے دیا ہے، دنیا میں ایسے ممالک ہیں جہاں کئی کئی ہفتے سورج نہیں نکلتا، اسلام پوری دنیا کے انسانوں کیلئے ہے۔انہوں نے کہا کہ موبائل ایپ بنا رہے ہیں جس میں چاند کی رویت سے متعلق تمام معلومات موجود ہیں۔ہم ایپ پر ملک کی سرحدوں کے اندر ہی چاند دکھا رہے ہیں، منگل کو چاند ایک گھنٹے کیلئے ہماری سرحد پر موجود رہے گا، ایک ہی دن عید کرنے کیلئے ہم نے بہت محنت کی ہے،ہمارا مقصد کسی کو نیچا دکھانا نہیں ہے۔ ہماری خوشیوں کے ایام کو تقسیم کا باعث نہیں ہونا چاہیے، مسلمان علمی قوم ہے، فلکیات کا علم مسلمانوں نے متعارف کرایا، سورج، چاند اور دیگر سیارے اپنے مدار میں گھومتے رہتے ہیں، بادلوں کے آنے کا یہ مطلب نہیں ہوتا کہ چاند نکلا ہی نہیں ہے، موبائل ایپ سے تمام کہکشاں دیکھی جاسکتی ہے، موبائل ایپ کو مختلف نظام کے ساتھ جوڑا گیا ہے۔
رویت ہلال کمیٹی جو دوربین استعمال کر رہی ہے وہ 50 سال پرانی ہے، اگر سائنسی آلات استعمال نہیں کرنا تو پھر عینک کے بغیر چاند دیکھیں، پرانے زمانے میں سورج کو دیکھ کر ٹائم جانا جاتا تھا، لیکن اب گھڑی دیکھ کر ہی ٹائم فکس کیا جاتا ہے۔
دوسری جانب شوال کا چاند دیکھنے کیلئے مرکزی رویتِ ہلال کمیٹی پاکستان کا اجلاس کل کراچی میں بعد نمازِ عصر محکمہ موسمیات کے دفتر میں ہو گا۔
اب اللہ خیر کرے کہیں ملک میں تین عیدیں نہ شروع ہو جائیں ایک مفتی پوپلزئی کے ماننے والوں کی ، دوسری سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کو سمجھنے والوں کی اور تیسری جنہوں نے مرکزی رویت ہلال کمیٹی کے تحت منانی ہے۔ یہ مسئلہ سنجیدہ ہے اگر مفتی پوپلزئی ، مفتی منیب الرحمن اور وفاقی وزیر فواد چوہدری ملک کرقوم کو تقسیم سے بچا نے کیلئے سنجیدہ کوشش کریں تو کیا ہی اچھا نہ ہو گا۔

یہ بھی پڑھیں:  سابق صدر آصف زرداری نے بھی کورونا ویکسین لگوا لی