اگر نیب مجھ پر کرپشن ثابت کر دے میں سیاست چھوڑ دوں گا:میاں حمزہ شہباز شریف

EjazNews

میاں حمزہ شہباز شریف نے لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر میں گرفتار ہو جاتا ہوں تو یہ تیسری بار میری بلی چڑھے گی ، ان کا کہنا تھا کہ کتنے اساتذہ کو ہتھکڑیاں لگیں گی ،نیب سے پوچھا جائے گا نیب کیا کر رہا ہے ۔ ملک میں معیشت جام ہو چکی ہے۔ نیب نے انویسٹر اور تاجروں کو ہراساں کیا ہے کوئی نیب کو پوچھے گا۔ بیوروکریٹ نیب کے ڈر سے فائلیں نہیں لاتے۔ان کا کہنا تھا کہ میرے کیس کو ٹیسٹ کیس بنایا جائے ۔ حمزہ شہباز شریف عدالت جائے گا ، صحافی کو بھی بلایا جائے اور نیب چیئرمین کو بھی بلایا جائے ،جھوٹ اور سچ کا فیصلہ ہو جائے گا۔
ان کا کہنا تھا کہ میں پاکستانی قوم کو کہنا چاہتا ہوں یہ میرا مسئلہ نہیں ہے میں نے نیب کو بھگت لیا ہے۔ لیکن پاکستانی معیشت میری آنکھوں کے سامنے ڈوب رہی ہے۔ آج غریب آدمی نیب اور نیازی خان ،شریف خاندان کے حسد میں جل رہا ہے۔ آج پاکستان کا مزدور مہنگائی کی بھٹی میں جل رہا ہے۔ نیر و بانسری بجاتا رہا اور ملک ڈوب گیا۔ ہندوستانی تھنک ٹینک کہہ رہے ہیں کہ پاکستانی معیشت ڈوب رہی ہے اس سے اچھا موقع نہیں ہے کہ پاکستان کو سبق سکھایا جائے۔ جب کشتی ڈوب رہی ہوتی ہے تو ملا ح اس کو بچانے کا راستہ ڈھونڈ رہا ہوتا ہے لیکن ان کے پاس کوئی راستہ بھی نہیں ہے۔ موجودہ حکومت نے شہباز شریف پر الزام لگائے تھے شہباز شریف عدالت میں چلے گئے ،10ارب ہر جانے کا دعوی کیا ۔ جب وہ عدالت جاتے تھے حکومت کا وکیل چھٹی لے لیتا تھا۔ میں خوفزدہ ہوں اپنی گرفتاری کے ڈر سے نہیں بلکہ اس بجٹ کے بعد جو مہنگائی کا طوفان آئے گا اس سے ،غریب آدمی نہ بجلی کے بل ادا کر سکے گا، نہ دوائی خرید سکے گا اور نہ ہی اپنے اخراجات پورے کر سکے گا۔ جب یہ حالت ہوتی ہے تو غریب آدمی کچھ بھی کر سکتا ہے۔ میں درد دل سے التجا کرتا ہوں خدارا اس ملک کو بچالیں ۔
اس ملک کی معیشت کو تباہ کرنے میں نیب کا نام سب سے آگے ہو گا، اس ملک کی معیشت کا بیڑا غرق کرنے میں ، آج لوگ ملک میں انویسٹمنٹ کرنے کو تیار نہیں۔ اگر اپوزیشن کو گرفتار کرنے سے ملک کے مسائل حل ہوسکتے ہیںتو کریں ۔ یہ مطالبہ پاکستانی کی حیثیت سے کرتا ہوں کہ نیب چیئرمین نے اپنے انٹرویو میں جو کہا اس کے لیے بینچ تشکیل دیا جائے ۔اگر میرے خلاف کرپشن ثابت ہوتی ہے تو میں سیاست چھوڑ دوں گا ۔ میں نے آپ کے سامنے قرآنی آیت رکھ دی ہیں۔ نیب چیئرمین کا احتساب ہونا چاہیے ۔یہاں لوگوں کے سولی پر چڑھنے کے بعد پتہ چلتا ہے کہ با عزت بری ہو گیا ہے۔ میں اپنی پڑھائی کے سال کا حساب بھی مانگتا ہوںاور مشرف کے دس سال کا حساب بھی مانگتا ہوں۔

یہ بھی پڑھیں:  پاکستان کا زمین سے زمین تک مار کرنے والے میزائل شاہین2کا کامیاب تجربہ