امریکہ میں 90فیصد منشیات میکسیکو سے آتی ہے: ڈونلڈ ٹرمپ

EjazNews

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ برسر اقتدارآنے سے پہلے اپنی صدارتی مہم کے دوران بھی میکسیکو اور امریکہ کے درمیان دیوار حائل کرنے کی خواہشات کا اظہار کرتے رہتے تھے اور اقتدار میں آنے کے بعد انہوں نے اس کیلئے پوری جستجو بھی کی ۔ یہ وہ واحد مسئلہ تھا جس پر امریکی پوری طرح تقسیم نظر آئے۔ کانگریس ان کے اس اقدام کیخلاف تھی ۔ جب امریکہ میں یہ مہم اپنے عروج پر تھی اس وقت بھی ان کی اپنی پارٹی کے اندر سے بھی میکسیکو میں دیوار کی مخالفت کیلئے آواز یں سنی جاتی رہی ہیں۔ گزشتہ روز امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اپنی ہمسایہ ریاست میکسیکو پر الزام عائد کیا ہے کہ امریکہ میں 90فیصد منشیات میکسیکو اور ساﺅتھ بارڈر کے ذریعے امریکہ میں آتی ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ پچھلے سال 80ہزار لوگ یہاں پر مارے گئے۔ اور ہر سال 10لاکھ لوگ یہاں پر اپنے آپ کو بربادی میں ڈالتے ہیں۔ اور ایسا کئی سالوں سے جاری ہے لیکن اس کے بارے میں کسی نے کچھ نہیں کیا۔ ان کا کہنا ہے کہ اس وقت امریکہ کامیکسیکو کے ساتھ تجارت میں سو بلین ڈالر کا خسارہ ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  کرونا وائرس: پوری دنیا کا مسئلہ بن چکا ہے