متحدہ عرب امارات غیر ملکیوں کو اب مستقل شہریت مل سکے گی

EjazNews

متحدہ عرب امارات نے سرمایہ کاروں، بہترین ہنر رکھنے والوں، اپنا کاروبار کرنے والوں ، محققین اور بہترین تعلیمی قابلیت کے حامل افراد،فنکار ، انجینئرز ، سائنسدانوں کیلئے گولڈن کارڈ سکیم متعارف کرا دی ہے۔ جس کی باقاعدہ منظوری بھی دی جا چکی ہے۔

دبئی کے حکمران شیخ محمد بن راشد المکتوم اور گورنمنٹ آف یو اے ای نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اس بات کو واضح کر دیا ہے کہ یہ سکیم جاری کی جا چکی ہے۔
گورنمنٹ آف یو اے ای کے مطابق ابتدائی طور پر 70ممالک کے 6ہزار 8سو افراد اس معیارپر پورا اترے ہیں ۔ جو اس گولڈ کارڈ سکیم کے تحت فوائد حاصل کر پائیں گے ۔ جن لوگوں کے پاس یہ کارڈ ہوں ان کی فیملی بھی اس سے مستفید ہو گی۔
مستقل رہائش رکھنے والے سرمایہ کاروں کیلئے ضروری ہے کہ انہوں نے 27ارب ڈالر کی سرمایہ کاری متحدہ عرب امارات میں کی ہو۔

یاد رہے متحدہ عرب امارات کے قانون کے تحت جن افراد کے پاس اقامہ ہوتا ہے وہ اپنے اہلِ خانہ کو اپنے ساتھ رکھ سکتے ہیں، رشتہ داروں کے لیے ویزا لے سکتے ہیں اور گھریلو ملازمین کے ساتھ ساتھ جائیداد بھی خرید سکتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:  ڈونلڈ ٹرمپ کا پہلی مرتبہ طالبان سے ٹیلی فونک رابطہ، امن کی طرف پیشرفت