Dr-Firdous

بلاول بھٹو زرداری کا افطار ڈنر: سوشل میڈیا پر گرما گرم بحث

EjazNews

معاون خصوصی اطلاعات و نشریات کا کہنا ہے کہ افطارپارٹی کے حوالے سے میڈیا کے اندر بھونچال آیا ہوا۔ ایک دوسرے پر کرپشن کے سنگین الزام لگانے والے آج کس لئے گٹھ جوڑ کر رہے ہیں؟ قرضوں کی دلدل میں چھوڑ کر جانے والے کس منہ سے ملکی معاشی مسائل کی بات کرتے ہیں۔افطار ڈنر کی آڑ می مک مکا کیلئے چو ر دروازہ ڈھونڈا جارہا ہے۔
میڈیا ملک میں افراتفری پھیلانے والے اس ٹوسے سے قوم کا حساب مانگے۔
سب چور جب اکٹھے ہو جائیں تو مطلب ملک میں لیڈر ایماندار ہے۔وزیراعظم عمران خان ملک و قوم کیلئے امید کی کرن ہیں۔

نفسیہ شاہ

جبکہ پاکستان پیپلز پارٹی کی سیکرٹری اطلاعات نفسیہ شاہ کہتی ہیں ایک افطار ڈنر سے حکومتی بوکھلاہٹ مضحکہ خیز ہے۔ پی ٹی آئی کی بوکھلاہٹ کیا اس بات کا اظہار ہے کہ حکومت ایک افطار ڈنر کی مار ہے؟۔ حکومت کی گھبراہٹ اس بات کا بھی ثبوت ہے کہ جی کا جانا ٹھہر گیا ہے۔ دعوت افطار مذہبی و تہذیبی روایات کا حصہ ہے۔ حکومت کے ہوش اڑنا سمجھ سے بالاتر ہے۔ دھاندلی کی کھوکھلی بنیادوں پر کھڑی حکومت عوامی غیض و غضب میں بہہ جائے گی۔

یہ بھی پڑھیں:  حکومت نے غیرملکی افراد کے لیے این او سی کی شرط ختم کر دی