پاکستانی ٹیم کی شانداری کارکردگی سیریز کا ایک بھی میچ نہ جیت سکی

EjazNews

لیڈز میں کھیل جانے والے پانچویں ون ڈے میچ میں انگلش ٹیم نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا اور مقررہ اوورز میں9وکٹوں کے نقصان پر 351رنز بنائے۔ اور گرین شرٹس کو جیت کیلئے 352رنز کا ہدف دیا، شاہین شاہ آفردی نے 4وکٹیں حاصل کیں۔ انگلینڈ کی پہلی وکٹ 63رنز پر گری ۔ جیمز ونس نے 33رنز بنائے۔ بریسٹو 32رنز بنا پائے۔ جوروٹ نے اچھے کھیل کا مظاہرہ کرتے ہوئے84جبکہ اوئن مورگن نے 76رنز بنائے۔ بٹلر نے 34رنز جبکہ بین سٹوکس 21بنا بنا کر کیچ آئوٹ ہوئے۔ ٹام کرن نے 29رنز کی اننگز کھیلی۔

پاکستان کی طرف سے کھیلتے ہوئے بابر اعظم اور کپتان سرفراز احمد نے شاندار کھیل کا مظاہرہ کرتے ہوئے بالترتیب87اور97سکور کیا ۔فاخر زمان اور محمد حفیظ کوئی سکور ٹیم کیلئے نہ بنا سکے۔عابد علی نے 5،شعیب ملک4آصف علی22،،عماد وسیم25،حسن علی11،شاہین شاہ آفریدی19،محمد حسنین28سکور بنا کر پویلین کو لوٹے۔

یاد رہے ورلڈ کپ سے پہلے کھیلی جانے والی اس سیریز میں آسٹریلیا کی طرح کوئی میچ نہیں جیتا جاسکا۔ آسٹریلیا کے ساتھ کھیلنے کے دور موقف یہ اختیار کیا گیا تھا کہ ٹیم تھکی ہوئی ہے۔مین کھلاڑیوں کو آرام دیا گیا ہے۔ مان لیا لیکن اس دفعہ تو ایسا نہیں تھا۔ ٹیم لڑی ضرور لیکن بہر کیف یہ اپنا جگہ کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے ۔ ہم دعا گو ہیں کہ ہماری ٹیم ورلڈ کپ میں ضرور اچھی کارکردگی دکھا سکے ورنہ پاکستانیوں کیلئے یہ ورلڈ کپ دوسرے بہت سے ورلڈ کپوں کی طرح صرف ایک کھیل کے طورپر دیکھنے کو رہ جائے گا۔ جذباتیت اور کھیل کی الفیت کھیل دور چلی جائے گی۔

یہ بھی پڑھیں:  دنیا امیر کو نہیں جو انسانیت کیلئے کچھ کر جاتے ہیں انہیں یاد رکھتی ہے: وزیراعظم عمران خان