imran-khan-4

وزیراعظم عمران خان کا شوکت خانم فنڈ ریزنگ میں خطاب

EjazNews

وزیراعظم عمران خان کی شوکت خان فنڈ ریزنگ سے خطاب میں کہنا تھا کہ شوکت خان وہ ہسپتال جو 75فیصد غریبوں کا علاج مفت کرتا ہے اور کینسر کا علاج کرتا ہے جو بہت مہنگا علاج ہے ۔ انہوں نے افطار ڈنر میں شرکاء کو کہا کہ آپ سب ہر سال آتے ہیں اور دل کھول کر پیسہ دیتے ہیں اور پہلے سے زیادہ پیسے دیتے ہیں۔ ہماری تین افطاریاں ہوئی ہیں اور تینوں افطاریوں میں پہلے سے زیادہ پیسہ اکٹھا کیا ہے۔ میں آپ کو انسانی معاشرے اور جانوروں کے معاشرے میں فرق بتانا چاہتا ہوں۔ انسان کے معاشرے میں رحم ہوتا ہے اور انصاف ہوتا ہے جانوروں کے معاشرے میں نہیں ہوتا۔ وہاں نہ رحم ہوتا ہے نہ انصاف ہوتا ہے۔

جہاں ہماری قوم کی بہت سی کمزوریاں ہیں وہاں اس قوم میں قربانی کا جذبہ ہے۔نام لیے بغیر ان کا کہنا تھا کہ آج ایک اور افطاری بھی ہو رہی ہے شیطانوں والی۔ اگر وہ شیطان اللہ کی بات مان کر اللہ کے سامنے جھک جاتا تو آج یہ شیطان نہ ہوتے۔ ان کا کہنا تھا جو سارے جمع ہوئے ہیں جمہوریت بچانے کیلئے یہ وہ لوگ ہیں بد قسمتی سے جن کو دیکھ کر مایوسی ہوتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  تبدیلی آگئ ہے

آپ اچھے سے اچھے ریسٹورنٹ میں چلیں جائیں کھانا کھالیں اگر آپ اسی پیسے سے غریب کو کھانا کھلانے پر خرچ کر دیں تو آپ کو اندر سے خوشی ملے گی جب آپ دوسروں کیلئے کچھ کرتے ہیں۔ تو آپ کی رو ح کو سکون ملتا ہے۔ ان کا کہنا تھا کرکٹ میں بڑی بڑی کامیابیوں پر مجھے کبھی خوشی نہیںلیکن مجھے حقیقی خوشی اور سکون ملا جب شوکت خانم کے دروازے کھلے تھے1994ء میں۔

ان کا کہنا تھا جب میں کرکٹ کھیلتا تھا تو لوگوں نے کہا ورلڈ کپ نہیں جیت سکتے ، پھرلوگوں نے کہا ہسپتال نہیں بن سکتا، پھر لوگوں نے کہا یہ اقتدار میں نہیں آسکتا۔سب کچھ ہوا اور کامیابی سے ہوا ۔ میں آپ کویقین دلاتا ہوں اسی طرح پاکستان کو بھی چلا کر دکھائوں گا اور پاکستان اس سارے خطے میں سب سے تیزی سے اوپر جائے گا ۔