نوح علیہ السلام کا سبق آموز واقعہ

EjazNews

پیارے بچو! صدیوں پہلے نبی نوح علیہ السلام کو اللہ نے ایک کشتی بنانے کا حکم دیااور اپنے نبی علیہ السلام کو بتایا کہ ایسا سیلاب آئے گا جس میں کوئی بچ نہ پائے گا۔ لیکن جو کشتی تم تیار کرو گے اس میں سوار تمام محفوظ رہیں گے۔ نوح علیہ السلام جب کشتی بنا رہے تھے تو کفار آپ علیہ السلام کا مذاق اڑاتے تھے ۔آپ علیہ السلام نے دن رات کی کڑی محنت کے بعد ایک بہت بڑی کشتی تیار کی۔
کشتی تیار ہونے کے بعد اللہ کی جانب سے آپ علیہ السلام کیلئے حکم آیا کہ ایمان والوں اور جانداروں میں سے ہر ایک کا جوڑا نر اور مادہ کشتی میں سوار کرلو۔ اور ان سب کے کھانے پینے کا انتظام بھی کر لو۔ اللہ کے حکم کے مطابق نوح علیہ السلام نے تمام جانداروں اور ایمان والوں کو اپنی کشتی میں سوار کر لیا۔ جانوروں میں سے ہر جانور کا جوڑا کشتی میں سوار ہوا۔
پیارے بچو جب نوح علیہ السلام کشتی پر سوار ہوئے اس کے بعد موسم بدلنا شروع ہوا۔ پہلے ہلکی بوندا باندی ہوئی، اس کے بعد ارش ہونے لگی۔ بارش کا زور بڑھنے لگااور اندھیرے پر اندھیرا چھانے لگا۔ چاروں طرف سائیں سائیں کرتی ہوائیں چلنے لگیں۔ بارش اتنی زیادہ ہوئی کہ ہر طرف تا حد نظر پانی ہی پانی تھا۔
پیارے بچو صرف آسمانی بارش سے ہی اتنا بڑا سیلاب نہیں آیا بلکہ زمین کا 70فیصد حصہ پانی ہے اور زمین چشموں کی صورت میں پانی اگلنے لگی، زمین سمندر میں بدل گئی جس میں اونچے اونچے پہاڑ بھی زیر آب آگئے اور اس طوفان سیلاب کی موجیں اونچے ترین پہاڑوں سے بھی اونچی ہو ں گئیں۔
بچو ! اگر آپ میں سے کسی نے سمندر دیکھا تو آپ کو اندازہ ہو سکتا ہے کہ سمندر میں زمین نظر نہیں آتی صرف پانی نظر آتا ہے ایسا ہی اس وقت میں بھی ہوا کہ یہ زمین جس پر ہم رہ رہے ہیں اس کے پہاڑ ، درخت ، صحرا سب کچھ ختم ہو گیا صرف حضرت نوح علیہ السلام کی کشتی اور اس میں سوار انسان باقی بچے ۔ وہ تمام انسان جنہوںنے حضرت نوح علیہ السلام کی بات نہیں مانی تھی وہ سب کے سب غرق ہو گئے ۔
پیارے بچو! اللہ کے نبی علیہ السلام نے اللہ سے دعائیں مانگیں ۔ اللہ کے حکم سے بارش تھم گئی زمین نے سارا پانی پی لیا اور نو ح علیہ السلام کی کشتی جودی نامی پہاڑ پر جا ٹھہری۔ایمان والوںنے اللہ کا شکر ادا کیا کہ اس نے ان سب کو تباہ ا ور برباد کرنے والے طوفان سے بچا یا۔
پیارے بچو! اس کشتی کو صدیو ں بعد آج بھی ڈھونڈنے کی کوشش کی جارہی ہے۔ کہا جاتا ہے کہ یہ کشتی ترکی کے اس پہاڑی سلسلوں میں موجودہے جہاں پر صدیوں سے برف جمی ہوئی ہے اور ان برفانی تہوں کے نیچے اس کشتی کے آثار ملے ہیں۔
پیارے بچوں اگر آپ نوح علیہ السلام کا پورا قصہ پڑھنا چاہتے ہو تو آپ ejaznews.comکی ویب سائٹ کے سیکشن اسلام میں جا کر یہ پورا قصہ بھی پڑھ سکتے ہو۔

یہ بھی پڑھیں:  پیارے بچوں کیلئے کچھ آداب زندگی
کیٹاگری میں : بچے