firdos

کابینہ اجلاس کے بعد معاون خصوصی کی میڈیا بریفنگ

EjazNews

معاون خصوصی اطلاعات فردوس عاشق اعوان نے وفاقی کابینہ کے اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کی ۔جس میں ان کا کہنا تھا عوام کو لوڈ شیڈنگ سے بچانے کے لیے ترجیحات طے کی گئیں۔ان کاکہنا تھاسحر و افطار میں بجلی کی بلا تعطل فراہمی یقینی بنانے کی ہدایت کی گئی۔ توانائی کے مسائل سے متعلق بھی کابینہ اجلاس میں گفتگو ہوئی، پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں سے متعلق اقتصادی رابطہ کمیٹی کے فیصلے پر غور کیا گیا اور کمیٹی کے فیصلوں کی توثیق کی گئی۔
ان کا کہنا تھا کابینہ کو مدارس کی رجسٹریشن اور وزارت تعلیم کے ماتحت کرنے پر بریفنگ دی گئی۔ مدارس کی رجسٹریشن وزارت تعلیم میں ون ونڈو کے تحت کی جائے گی۔ 30 ہزار مدارس کو ریگولرائز کرنے پر وزیر تعلیم نے بریفنگ دی۔ مدارس کے بچوں کا حق ہے کہ وہ جدید علوم سے روشناس ہوں۔ان کا کہنا تھامدارس وزارت تعلیم کے ماتحت نہیں بلکہ منسلک کیے گئے ہیں، مدارس کی رجسٹریشن صرف وزارت تعلیم کے تحت ہوگی۔ وزارت تعلیم مدارس کے کام میں رکاوٹ کے لیے نہیں سہولت کاری کرے گی۔ان کا کہنا تھا ہمارا بنیادی ایجنڈا ہے مدارس کی رجسٹریشن کریں، مدارس کے طلبہ کو ان کا تعلیم کا جائز حق دینا چاہتے ہیں۔ چاہتے ہیں مدارس طلبہ کو دور حاضر کے تقاضوں سے ہم آہنگ کریں، مدارس میں غیر ملکی طلبہ وزارت خارجہ کے ذریعے آئیں گے۔جبکہ مدارس کے طلبہ کی ووکیشنل ٹریننگ کی جائے گی۔ مدارس کے طلبہ کو قومی دھارے میں لانا مقصد ہے۔ یکساں نصاب کو قومی نصاب کے طور پر لاگو کرنا چاہتے ہیں۔ان کا کہناتھا 30 ہزار مدارس ہمارا ہیومن ریسورس ہیں۔
ان کا کہنا تھا کہ وزارتوں میں انٹرٹینمنٹ اینڈ گفٹس کا فنڈ ختم کردیا۔ چائے پانی اب وزرا کو اپنی جیب سے کرنا ہوگاجبکہ ایس ای سی پی کی سالانہ رپورٹ کی کابینہ میں منظوری دی گئی۔جبکہ 3 ماہ کے اندر تمام ڈویژنز اور وزارتوں میں آسامیاں پر کی جائیں گی۔ آئندہ کسی کو ایڈیشنل چارج نہیں دیا جائے گا۔ اس کے ساتھ ساتھ پاکستان اور آذر بائیجان میں زرعی شعبے میں معاہدے کی منظوری دی گئی۔

یہ بھی پڑھیں:  مبارکاں۔ مبارکاں اور مبارکاں