پنجاب بھر میں نیا بلدیاتی نظام نافذ

EjazNews

30اپریل کو پنجاب اسمبلی میں نئے بلدیاتی نظام کا قانون منظور کر لیا گیا تھا۔نئے بلدیاتی نظام کے تحت ویلج کونسل اور شہروں میں محلہ کونسل کا انتخاب غیر جماعتی بنیادوں پرہوگا۔ جبکہ گورنر پنجاب چوہدری سرور نے اس بل پر دستخط بھی کر دئیے ہوئے ہیں۔
نئے بلدیاتی نظام کے تحت ایک سال تک مقامی حکومت کو ایڈمنسٹریٹر چلائیں گے۔ نئے بلدیاتی الیکشن اگلے سال ہوں گے۔ تب تک شہروں میں میونسپل اور محلہ کونسل جبکہ دیہات میں تحصیل اور ویلج کونسل ایڈمنسٹریٹر ز کے تحت کام کریں گی۔
اس قانون کے تحت صوبائی وزیر قانون راجہ بشارت نے نئے بلدیاتی نظام کیلئے ایڈمنسٹریٹرز کا نوٹیفکیشن جاری کر دیا ہے ۔ اس نوٹیفکیشن کے مطابق ڈویژنل اور ضلعی سطح پر عملدرآمد کیلئے ٹیمیں کام کریں گی جبکہ کابینہ کمیٹی کے سربراہ وزیر بلدیاتی پنجاب ہوں گے جو اس سارے عمل کی نگرانی اور ہدایات دیں گے۔ صوبائی ٹیموں کے سربراہ ایڈیشنل چیف سیکرٹریز جبکہ ڈویژنل اور ضلعی ٹیموں کے سربراہ متعلقہ کمشنر اور ڈپٹی کمشنر ہوں گے، تمام ٹیمیں ٹرانزیشن پلان کے تحت جلد عملدرآمد کو یقینی بنائیں گی۔

یہ بھی پڑھیں:  مہاتیر محمد پاکستان پہنچ گئے
بلدیاتی اداروں کیخلاف احتجاج کرتے ہوئے چیئرمین ،وائس چیئرمین

اس قانون کی اپوزیشن نے بھرپور مخالفت کی اور اس کو مقامی اداروں کی تباہی سے تعبیر کیا جبکہ پرانے قانون کے تحت منتخب ہونے والے اراکین نے احتجاج بھی کیا ۔