arvin kajriwal

انڈین الیکشن میں جوتے اور تھپڑ بڑھتے جارہے ہیں

EjazNews

عام آدمی پارٹی کے سربراہ اور دہلی کے وزیراعلیٰ موتی انتخابی مہم کے سلسلے میں ایک جلوس کی قیادت کر رہے تھے کہ ایک شخص نے وزیراعلیٰ کو زناٹے دار تھپڑ جڑ دیا۔انڈین میڈیا کے مطابق عام آدمی پارٹی کے ورکرز نے تھپڑ مارنے والے شخص کو پکڑ کر پولیس کے حوالے کر دیا جہاں اس کی شناخت 33سالہ سریش کے نام سے ہوئی جو سپیئر پارٹس کی خریدو فروخت کا کام کرتا ہے۔


انڈین میڈیا کے مطابق اروند کجریوال کہتے ہیں کہ جب اس شخص کی بیوی سے بات کی گئی تو وہ کہتی ہیں کہ ان کے میاں بہت بڑے مودی بھگت تھے۔ یعنی یہ حملہ ان پر کروایا گیا ہے نہ کہ کسی ناراضگی کی وجہ سے کیاگیا ہے۔
صرف یہ نہیں گزشتہ دنوں بی جے پی کے رہنما نرسہما راؤ پریس کانفرنس کر رہے تھے کہ ایک شخص نے ان پر جوتا دے مارا ۔ اس شخص کا کہناتھا کہ میرا بٹو سب سے مضبوط ہے۔
یہ جوتا ان پر اس وقت پڑا جب وہ مالے گاؤں دھماکے کے ملزم سدھوی پراگیا کی بی جے پی میں شمولیت پر پریس کانفرنس کر رہے تھے۔سکیورٹی گارڈز نے فوراً ہی اس شخص کو قابو کرلیاتھا ۔ جبکہ نرسہما رائو نے اسی وقت یہ ذمہ دار کانگریس کے کندھو ں پر ڈال دی تھی کہ یہ شخص کانگریسی ہے اور کانگریس نے ان پر حملہ کروایا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  امریکہ کی ایران پر پابندیاں برقرار رکھنے کی کوششیں، یورپ کی مخالفت