اب انصاف کیلئے سڑکوں پر آنا ہوگا؟

EjazNews

ٙحکومت کی جانب سے جوڈیشل کمیشن کی یقین دہانی پر دھرنا ختم تو ہو گیا۔اب جوڈیشل کب بنےگا اور کیا فیصلہ کرے گا سب کی نظریں اس پر جم گئی ہیں

نشویٰ کا کیس پورے پاکستان میں کسی سے ڈھکا چھپا ہوا نہیں ہے۔نشویٰ کے والد قیصر علی نے گلستان جوہر کے علاقے جوہر موڑ پر دھرنا دیا ہے۔ جس میں عام شہریوں اور سول سوسائٹی کی بڑی تعداد موجود ہیں۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئےننھی نشویٰ کے والد کا کہنا تھا کہ حکومت نے غیر رجسٹرڈ ہسپتالوں کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کی ہے، یہ مسئلہ صرف نشویٰ کا نہیں بلکہ 2 مزید بچے اپنی جان سے جاچکے ہیں۔ (یاد رہے کراچی میں غلط انجکشن لگنے سے مزید 2بچے اپنی جان کی بازی ہار چکے ہیں)۔
انہوں نے کہا کہ وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے وعدہ کیا تھا کہ ہسپتال کے مالک کو گرفتار کیا جائے گا مگر نہیں کیا گیا، میرا سوال ہے کہ وزیراعلیٰ اور گورنر زیادہ طاقتور ہیں یا ہسپتال کے مالکان جو اُن کے خلاف کارروائی عمل میں نہیں لائی گئی۔ان کا کہنا تھا ہماری جدوجہد کسی ایک ہسپتال کیخلاف نہیں، ہم چاہتے ہیں کہ جس کسی کے بھی ساتھ ایسا ہوا ہے وہ سامنے آئے، ہم سب کومل کر کھڑا ہونا ہوگا۔
یاد رہے :کراچی کے علاقے گلستان جوہر میں واقع دارالصحت ہسپتال میں غلط انجیکشن کا شکار ہونے والی 9 ماہ کی بچی کئی روز تک زیر علاج رہنے کے بعد 22 اپریل کو انتقال کرگئی تھی۔بچی کو غلط انجکشن لگانے پر چھوٹے درجے کا کچھ سٹاف گرفتار کیا گیا تھا ،اور ایسا سٹاف جو تربیت یافتہ ہی نہیں تھا اس کو آگے سے نہ رکھنے کا کہا گیا تھا ۔ کچھ رپورٹیں ایسی بھی منظر عام پر آئیں تھیں جن کے مطابق 5لاکھ جرمانہ کر کے ہسپتال کو بری الزمہ قرار دیا گیا تھا۔ اب نشویٰ کے والد قیصر کا دھرنا کیا رخ اختیار کرے گا اور کیسے ختم ہوگا یہ جلد پتہ چل جائے گا۔

نشویٰ کا والد قیصر علی میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے
یہ بھی پڑھیں:  یہ انتہائے جنون ہے ہمارا