معین اختر کو ہم سے بچھڑے 8برس ہو گئے

EjazNews

معین اختر ایسی شخصیت تھے جنہیں روتوں کو ہنسانے کا فن آتا تھا۔لیکن وہ صرف کامیڈین نہ تھے بلکہ فن کی دنیا میں مزاح سے لے کر پیروڈی تک انہوں نے پاکستانی انٹرٹینمنٹ میں تاریخ رقم کی۔ 24دسمبر 1950ء کو روشینوں کے شہر کراچی میں پیدا ہوئے۔ پاکستان میں ٹیلی ویژن کے آنے کے بعد 6ستمبر 1966ء سے پاکستان ٹیلی ویژن سے وابستہ ہو گئے۔ بشریٰ انصاری اور انور مقصود کے ساتھ ان کی جوڑی بہت سجتی تھی اور میرے خیال میں ان تینوں کی سوچ کا دائرہ کار بھی ایک ہی سمت میں تھا اسی لیے جب یہ کام کر رہے ہو تے تو ہمیشہ ایسا لگتا کہ جو کر دار وہ نبھا رہے ہیں خالص انہی کے لیے بنا ہے۔


ویسے تو انہوں نے بہت سے سٹیج ڈراموں میںاپنے فن کا جوہر دکھایا لیکن ’’بکرا قسطوں پر‘‘ سے شہرت کی بلندیوں کو چھوا۔ معین اختر کا شمار ان اداکاروں میں ہوتا ہے ۔معین اختر ان اداکاروں میں تھے جنہوں نے بیک وقت ریڈیو، ٹی وی، سٹیج اور فلم کی دنیا میں اپنے فن کی صلاحیتوں کا مظاہرہ کیا۔
22اپریل 2011ء میں یہ درویش صفت اس دنیا فانی کو خیر باد کہہ گیا ۔انہیں صدارتی ایوارڈوں سے بھی نواز گیا۔

یہ بھی پڑھیں:  درج (شمعون عباسی)بمقابلہ کاف کنگنا (خلیل الرحمن قمر)