خواتین کی جاذب نظر شخصیت کے چند بنیادی اصول

EjazNews

شخصیت کو دلکش اور جاذب نظر بنانے کیلئے جسمانی صفائی بہت ضروری ہے۔ کوئی انسان کتنا بھی خوبصورت کیوں نہ ہو لیکن اگر صاف ستھرا نہ ہوتو کوئی بھی اس کو پسند نہیں کرتا۔ جسمانی صفائی انسان کیلئے بہت ضروری ہے۔جسم اگر صاف ستھرا ہو تو انسان کی اپنی طبیعت بھی خوش رہتی ہے جسمانی صفائی میں ہاتھ، ناخن ، بال ، آنکھوں ، دانتوں اور کانوں کی صفائی شامل ہے۔
ہاتھوں کی صفائی
ہاتھوں کے خوبصورت اور صفائی سے انسان کی شخصیت پر نمایاں اثرات مرتب ہوتے ہیں، اس لئے ہاتھوں کو خوبصورت بنانے کیلئے ان کی جلد کی حفاظت کرنا ضروری ہے۔ خواتین کو کپڑے اور برتن دھونے کے بعد کوئی اچھی سی کریم ہاتھ پر لگا لینی چاہئے تاکہ ہاتھوں کی جلد پر کوئی برا اثر نہ پڑے اور جلد نرم رہے۔


دانتوں کی صفائی و حفاظت
دانت انسان کے چہرے میں نمایاں اثر رکھتے ہیں اگر یہ گندے ہوں تو دیکھنے والے کو گھن آتی ہے ، نیز معدے اور مسوڑھوں کی بیماری لاحق ہو جاتی ہیں، اس لئے دانتوں کو چمکدار اور خوبصورت بنانے کیلئے مندرجہ ذیل باتوں کا خیال رکھیں:
ہمیشہ متوازن غذاکھائیں، دانتوں کیلئے دودھ بہت ضرور ہے کیونکہ دودھ میں کیلشیم وافر مقدار میں موجود ہوتا ہے جو دانتوں کی بناوٹ کیلئے انتہائی ضروری ہے۔
زیادہ میٹھی چیز کھانے سے پرہیز کریں کیونکہ اس سے دانتوں کی چمک ضائع ہو جاتی ہے اور دانتوں میں کیڑا بھی لگ جاتا ہے۔
دانتوں کے ماہر Dentistسے باقاعدگی کے ساتھ چیک اپ کراتے رہیں۔

یہ بھی پڑھیں:  ہاتھ ۔۔۔۔آپ کی شخصیت کا !


ناخنوں کی صفائی
ناخنوں کو ہرروز صاف کرنا ضروری ہے تاکہ ان کے اندر میل جمع نہ ہو سکے جو صحت کیلئے انتہائی مضر ہے، نیز اس سے ناخن بھی بدنما لگتے ہیں اپنے ناخنوں کو باقاعدگی سے پندرہ دن میں ایک بار ضرور تراشیں تاکہ نہ تو اتنے لمبے ہو جائیں کہ ان کے اندر میل جمع ہو جائے اور نہ اتنے چھوٹے ہوں کہ ان کے نیچے کا گوشت نظر آنے لگے۔


آنکھوں کی صفائی و حفاظت
دیگر جسمانی اعضاءکی طرح انسان کیلئے آنکھیں بھی بے حد ضروری ہیں۔ یہ انسان کی شخصیت کی آئینہ دار ہوتی ہیں اس لئے ان کو چمکدار اور صاف ستھر ا رکھیں، آنکھوں کی حفاظت کیلئے درج ذیل عوامل پر عمل کریں:
آنکھوں کیلئے متوازن غذا بہت ضروری ہے۔ ضعیف اشخاص کیلئے گاجر اور مچھلی بہت مفید ہے۔
آنکھوں کو ٹھیک رکھنے کیلئے اپنی عمر کے مطابق مناسب نیند ضروری ہے کیونکہ نیند پورینہ ہونے سے آنکھوں میں چمک نہیں رہتی۔ پپوٹے سوج جاتے ہیں، نیز آنکھوں کے نیچے گہرے سیاہ حلقے بھی پڑ جاتے ہیں۔
پڑھنے یا کام کاج کرتے وقت روشنی مناسب ہونی چاہئے، ہمیشہ سیدھے بیٹھ کر اورکتاب کو ایک سے ڈیڑھ فٹ کے فاصلے پر رکھ کر پڑھیں۔
بالوں کی صفائی
اپنی شخصیت کو اجاگر کرنے اور خوبصورتی کو دوبالا کرنے کیلئے بال کسے اچھے نہیں لگتے۔ اسی طرح گرد آلود، میلے اور خشکی سے اٹے ہوئے بال بھی بہت برے لگتے ہیں جبکہ خوبصورت اور صاف ستھرے بال مخصوص حسن رکھتے ہیں۔
روزانہ شیمپو کرنا بالوں کیلئے نقصان دہ ہے، اس سے بال کم عمری میں ہی سفید ہو جاتے ہیں ۔ بالوں کو ہفتہ میں دو مرتبہ شیمپو کریں اور بعد میں زیادہ پانی سے اچھی طرح دھوئیں تاکہ ان میں جھاگ باقی نہ رہ جائے اس کے بعد تو لئے سے اچھی طرح رگڑ رگڑ کر خشک کریں بالوں کیلئے برش یا کنگھی علیحدہ استعمال کریں اور خوب اچھی طرح برش کریں ۔ اس سے خون کا دورانیہ تیز ہوتا ہے جو بالوں کی نشوونما کیلئے ضروری ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  میک اپ کے ذریعے اپنی جلد میں نکھار کیسے پیدا کریں؟(۲)