Hamza Shahbaz

حمزہ شہباز کی عبوری ضمانت میں 25اپریل تک توسیع

EjazNews

حمزہ شہباز آج لاہور ہائیکورٹ میں پیش ہوئی ۔2رکنی بینچ نے ان کے کیس کی سماعت کی۔
حمزہ شہباز کے وکل کا کہنا تھا نیب نےب ہت سارے ریکارڈ کی کاپی نہیں دی جو ریکارڈدیا گیا وہ بھی کل شام پہنچایا گیا ، نیب کی دستاویزات پر جواب کیلئے مہلت دی جائے۔جبکہ پراسیکیوٹر نیب کا کہنا تھا حمزہ شہباز پیش ہوئے مگر جوابات نہیں دئیے۔ ان کا کہناتھا وہ سب عدالت میں بتائیں گے۔ ریکارڈ فراہم کر چکے ہیں اب مزید توسیع نہ کی جائے۔
عدالت نے ڈی جی نیب کو نوٹس جاری کر دئیے اور ساتھ ہی حمزہ شہباز کی 25اپریل تک ضمانت میں توسیع کر دی۔
یاد رہے پنجاب میں اپوزیشن لیڈر میاں حمزہ شہباز شریف کو عدالت نے 17اپریل تک عبوری ضمانت دی ہوئی تھی اور کسی بھی کیس میں نیب کو ان کی گرفتاری سے روکا ہوا تھا۔ آج یہ ضمانت ختم ہو رہی ہے۔ گزشتہ رات نیب میں پیشی کے بعد انہوں نے میڈیا سے گفتگو بھی کی تھی اوربہت سے سوالا ت کے بارے میں ان کا کہناتھا کہ کل عدالت میں وہ جواب دیں گے۔ آمدن سے زائد اثاثے، منی لانڈرنگ اور صاف پانی کیس میں ان کی عبوری ضمانت آج ختم ہو رہی۔
چند روز قبل نیب نے میاں حمزہ شہباز شریف کو گرفتار کر نے کی کوشش کی تھی جہاں پر مسلم لیگ ن کے کارکنوں اور نیب کے درمیان تلخیاں بھی ہوئی تھیں۔ نیب اپنی کوشش کے باوجود میاں حمزہ شہباز شریف کو گرفتار نہ کر سکی ۔ اس دوران انہوں نے عدالت سے اپنی عبوری ضمانت کروالی تھی۔ آج اس ضمانت میں توسیع یا پھر گرفتاری کیا ہوگی ،یہ سوال سب کے ذہنوں میں گردش کر رہا ہے۔ نیب کہتی ہے کہ ان کے پاس میاں حمزہ شہباز شریف کیخلاف ٹھوس شواہد ہیںاور میاں حمزہ شہباز شریف کہتے ہیں کہ وہ بے گناہ ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:  ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان وزیراعلیٰ پنجاب کی معاون خصوصی مقرر